منگل, 22 اکتوبر 2019


تیل دار فصلوں کی کاشت وقت کی ضرورت ہے، محکمہ زراعت

ایمزٹی وی (راولپنڈی) محکمہ زراعت پنجاب کے مطابق خوردنی تیل کی ملکی ضروریات پوری کر نے کے لیے تیل دار فصلوں کی کاشت کو فروغ دینا وقت کی اہم ضرورت ہے تاکہ درآمد پر انحصار کم سے کم ہو۔ ترجمان نے کہا کہ پاکستان ملکی ضروریات کا صرف 34 فیصد خوردنی تیل پیدا کر تا ہے جبکہ باقی 66 فیصد درآمد کرنا پڑتا ہے جس پر کٹیر زر مبادلہ خرچ ہوتا ہے ۔ترجمان نے مزید بتایا کہ سورج مکھی کا شمار بھی تیل دار فصل میں ہوتا ہے تاہم سورج مکھی کی زیادہ پیداوار حاصل کرنے کے لیے صحیح وقت پر اس کی کاشت انتہائی ضروری ہے ۔ تاخیر سے کاشت کرنے کی صورت میں نہ صرف اس کی پیداوار میں کمی آجاتی ہے بلکہ اس سے تیل بھی کم حاصل ہوتا ہے ۔ بیرونی علاقوں میں اس کی کاشت کا انحصار زیادہ تر بارشوں کے پھیلائو پر ہوتا ہے ۔ سورج مکھی کی فصل سال میں دو مرتبہ کاشت کی جا سکتی ہے ۔ ایک موسم بہارمیں اور دوسری موسم خزاں میں ۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment