ھفتہ, 16 جنوری 2021


گیلپ سروے کےمطابق87%والدین بچےاسکولزبجھواناچاہتےہیں

کراچی : آل پاکستان پرائیویٹ اسکولز فیڈریشن نے وفاق کی 24 نومبر سے 10جنوری تک بند کرنے کی تجویزکو مسترد کردیا ہے

آل پاکستان پرائیویٹ ا سکولز فیڈریشن کے صدر کاشف مرزا کا کہنا ہے کہ نجی اسکولزکی بندش معاشی قتل ہے، بندش سے 10000 اسکولز مکمل بنداور7لاکھ ٹیچرزبےروزگارہوچکے ہیں ۔تنخواہیں و90فیصد سکولز عمارتوں کےکرائے فکسُ ہیں۔وزیراعظم اساتذہ کیلیے’’تعلیمی ریلیف پیکیج‘‘ کااعلان کریں

لاک ڈاؤن باعث5کروڑطلباکےتعلیمی نقصان کا ازالہ ناممکن ہے-UN،یونیسف،یونیسکووعالمی بنک ایڈویزری کے مطابق کورونامیں بھی اسکولز کھلے رکھے جائیں،بند کرنے سے نقصانات زیادہ ہیں۔گیلپ سروے کے مطابق87%والدین بچے سکولز بجھوانا چاہتے ہیں،کوویڈمیں7.5کروڑطلباکی تعلیم کا ناقابل تلافی نقصان ہوا ہے۔

2.5کروڑ پاکستانی بچےپہلے ہی اپنے آئینی حق سے محروم ہیں۔اسکول نہ جانے والے بچوں کی تعداد میں 50 فیصد سے زائد تعداد لڑکیوں کی ہےہر بچہ کو زندگی میں مساوی مواقع میسر آنے چاہیں۔تعلیم ہر بچے کاآئینی حق اور 25-A ریاست کا آئینی فریضہ ہے

انہوں نے مزید کہا ہے کہ آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن نے ثابت کیا ہےکہ طلباء اسکولزمیں مکمل محفوظ ہیں

انہوں نےمزید کہا ہے کہ سیاسی اجتماعات سے کرونا پھیلا، کروڑوں پاکستانیوں کو جان کا خطرہ ہےوزیراعظم،چیف جسٹس،آرمی چیف اور NCOC غیر قانونی سیاسی اجتماعات رکوائیں

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment