جمعرات, 21 نومبر 2019


تخم بالنگاکےجادوئی اثرات

تخم بالنگا کا استعمال صحت کے لیے بے شمار فائدے مند ہے کیونکہ اس میں موجود غذائیت ہڈیاں مضبوط کرنے میں بھی نہایت ہی معاون ثابت ہوتی ہیں۔

مگر ایک تحقیق کے مطابق تخم بالنگا انسان کو ڈپریشن جیسے مرض سے باہر نکالنے کی خاصیت بھی رکھتا ہے۔ 

ماہرین کے مطابق تخم بالنگا اومیگا 3سے مالا مال ہوتا ہے جو کہ انسان کے مزاج کو مثبت اور اسے خوش کرنے کے لیے بہترین ثابت ہوتا ہے۔

ڈپریشن ایک ایسی دماغی بیماری ہے جو اب بہت ہی عام ہے، ہم اپنے ارد گرد ایسے بے شمار لوگوں کو جانتے ہوں گے جو اس بیماری سے لڑ رہے ہیں۔

سینٹرل فوڈ ٹیکنالوجی ریسرچ انسٹیٹیوٹ کے ڈائریکٹر  پروفیسر رام نے بتایا کہ تقریباً 3 گرام تخم بالنگا کو ایک گلاس پانی میں ڈال کر 10 منٹ تک چھوڑ دیں جب یہ پانی اپنے اندر جذب کرلے گا تو اس کا با آسانی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

اس کے علاہ تخم بالنگا کو پَھلوں کے رس میں ملا کر بھی پی سکتے ہیں جب کہ اسے دودھ اور ملک شیک کے ساتھ بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ایک بالغ انسان کے جسم کو روزانہ 1 سے 2 گرام اومیگا 3 کی ضرورت ہوتی ہے جو کہ عموماً مچھلی یا چند پودوں کی بیجوں سے ہی حاصل کیا جاسکتا ہے، تخم بالنگا میں اومیگا 3 سب سے زیادہ مقدار میں پایا جاتا ہے جس کا روزانہ استعمال آپ کو بے شمار بیماریوں سے بچا سکتا ہے۔

اگر آپ ڈپریشن جیسی بیماری میں مبتلا ہیں تو روزانہ ایک چمچا تخم بالنگا اپنی خواراک میں شامل کریں جس سے آپ کو اپنی طبعیت میں فرق محسوس ہوگا۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment