منگل, 17 ستمبر 2019


سرکاری جامعات میں ممتاز منتظم کا تقرر بھی کیا جا سکے گا، ترمیم کے خلاف احتجاج کرینگے، انجمن اساتذہ جامعہ کراچی

ایمزٹی وی (کراچی)(سید محمد عسکری /اسٹاف رپورٹر) سندھ کی سرکاری جامعات میں اب ماہرین تعلیم کے ساتھ ساتھ ممتاز منتظم (Eminent Administrater) کا تقرر بھی کیا جا سکے گا۔ اس مقصد کےلئے گزشتہ ماہ صوبائی اسمبلی میں جامعات کے ترمیمی بل کی منظوری دیدی گئی ہے۔ تاہم ایک میڈیکل جامعہ کے سوا باقی تمام میڈیکل جامعات میں اس کا اطلاق نہیں ہوگا۔ سندھ جناح میڈیکل یونیورسٹی وہ واحد یونیورسٹی ہوگی جس میں ممتاز منتظم کا تقرر کیا جا سکے گا۔ اسی طرح سندھ کی جامعات میں ریٹائرڈ فوجی اور بیورو کریٹ بھی وائس چانسلربن سکیں گے۔ 1973ء کے ایکٹ کی روشنی میں سندھ کی جامعات میں ماہرین تعلیم ہی کا تقرر ہوتا رہا ہے۔ انجمن اساتذہ جامعہ کراچی کے صدر پروفیسر ڈاکٹر جمیل کاظمی نے اس صورتحال کو افسوسناک قرار دیا کہ جامعات میں اساتذہ کے بجائے ممتاز منتظم کی تقرری کی ترمیم جامعات کو تباہ کرنے کی کوشش ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ وہ اس ترمیم کے خلاف احتجاج کریں گے، اس مقصد کے لئے جامعات کے اساتذہ کی نمائندہ تنظیم کا اجلاس بلایا جا رہا ہے جس میں اہم فیصلے کئے جائیں گے ۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment