بدھ, 17 جولائی 2019


رمضان سےقبل ہی مہنگائی نےشہریوں کی کمرتوڑدی

بلوچستان کے صدر مقام کوئٹہ میں رمضان سے قبل ہی مہنگائی نے شہریوں کی کمر توڑ دی ہے، دودھ، گوشت اور سبزیوں کی قیمتوں میں من مانا اضافہ ہوگیا تاہم ضلعی انتظامیہ قیمتوں پر قابو پانے میں ناکام دکھائی دے رہی ہے۔

کوئٹہ میں بکرے کے گوشت کی فی کلو قیمت میں 50 روپے کا مزید اضافہ کردیا گیا جس کے بعد فی کلو قیمت 850 تک پہنچ گئی جب کہ سرکاری قیمت فی کلو 650 روپے مقرر ہے۔

اسی طرح سبزیوں کی قیمتوں میں بھی دوگنا اضافہ کیا جاچکا ہے، توری کی فی کلو قیمت 40 روپے کے اضافے کے ساتھ 120 روپے، ٹماٹر کی قیمت میں 20 روپے اضافے کے ساتھ فی کلو قیمت 80 روپے ہوگئی۔

شملہ مرچ کی فی کلو قیمت میں 80 روپےکا اضافہ ہوا جس کے بعد فی کلو قیمت 200 روپے ہوگئی جب کہ بھنڈی کی قیمت میں 20 روپے اضافے ہوگیا جس کے بعد یہ 180 روپے میں فروخت کی جا رہی ہے۔

دودھ کی سرکاری نرخ 95 کے بجائے 110 روپے فی لیٹر میں فروخت ہو رہا ہے جب کہ بعض علاقوں میں دودھ 115 روپے فی لیٹر بھی فروخت کیا جارہا ہے، اسی طرح دہی کی سرکاری قیمت 100 روپے فی کلو ہے لیکن 20 روپے اضافے کے بعد دہی 120 روپے فی کلو فروخت ہورہا ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment