جمعرات, 21 نومبر 2019


پرنسز ڈیانا کے بعد کیٹ مڈلٹن چترال پہنچ گئی

 
 
 
 
چترال : برطانوی شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ مڈلٹن چترال پہنچ گئے ، مہمانوں کو روایتی ٹوپی اور چغہ پہنایا گیا، پرنسز ڈیانا نے بھی 1991 میں چترال کا دورہ کیا تھا۔
 
تفصیلات کے مطابق برطانوی شاہی جوڑا اسلام آباد سے چترال پہنچا تو ان کا شاندار استقبال کیا گیا ، شاہی جوڑے کو روایتی ٹوپی اور چغہ پہنایا گیا، شہزادہ ولیم اور کیٹ مڈلٹن چترال میں بروغل اور ویلج بمبوریت کا دورہ کریں گے۔
 
 
 
خیال رہے شہزادہ ولیم کی والدہ پرنسز ڈیانا نے بھی 1991 میں چترال کا دورہ کیا تھا۔
 
 
 
ذرائع کے مطابق برطانوی شاہی جوڑا 17 اکتوبر جمعرات کو لاہور کا دورہ کرے گا، جہاں 12 بجے لاہور ایئرپورٹ پر گورنر پنجاب اور وزیراعلی پنجاب سے ملاقات طے ہیں، جس کے بعد وہ ایس او ایس چیلڈرن ویلج جائیں گے۔
 
ذرائع کے مطابق شہزادہ ولیم اور کیٹ مڈلٹن 17 اکتوبر دن ڈیڑھ بجے نیشنل کرکٹ اکیڈمی بھی جائیں گے اور بادشاہی مسجد اور شوکت خانم ہسپتال کا بھی دورہ کریں گے۔
 
گذشتہ روز برطانوی شاہی مہمانوں نے اپنے پانچ روزہ دورہ پاکستان کا آغاز اسلام آباد میں گرلز اسکول سے کیا، جہاں شاہی جوڑے نے بچیوں سے ملاقات کی۔۔ اسکول کی انتظامیہ نے پاکستان میں تعلیمی نظام سے متعلق بریف کیا۔ شہزادہ اورشہزادی نے کلاس رومز کامعائنہ کیا اور طالبات میں گھل مل گئے۔
 
 
شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ میڈلٹن نے اسلام آباد میں مارگلہ ہلز کی سیر کی، جہاں ہائیکنگ ٹریک ٹریل فائیو اور خوبصورت ندی کا دورہ بھی کیا۔ شاہی جوڑا تیس منٹ تک مارگلہ ہلز کے خوبصورت نظاروں سے لطف اندوز ہو تا رہا۔
 
شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ نے ایوان صدر میں صدرعارف علوی سے ملاقات کی، جس میں صدر مملکت نے ذہنی صحت، موسمیاتی تبدیلی، اور غربت کے خاتمے بارے شعور بیدار کرنے کے لئے شاہی جوڑے کی کوششوں کو سراہا۔
 
شاہی جوڑے نے وزیر اعظم ہاوس میں وزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقات کی، وزیر اعظم نے مرکزی دروازے پر مہمانوں کا استقبال کیا اور معزز مہمانوں کے ساتھ تفصیلی گفتگو کی، جس کے بعدمہمان جوڑے کے اعزاز میں ظہرانہ دیا گیا۔
 
شاہی جوڑا رکشے پر پاکستان مانومنٹ پہنچا،اس موقع پرشہزادی کیٹ مڈلٹن نے سبزرنگ کا لباس زیب تن کر رکھا تھا جبکہ شہزادہ ولیم نے سبز رنگ کی شیروانی زیب تن کی، تقریب میں سیاسی سماجی شخصیات اور ملیڑی سے وابستہ عہدیداروں نے بھی شرکت کی، قومی ترانہ کی دھن کو بھی تقریب کا حصہ بنایا گیاجبکہ روایتی دھنوں سے بھی شاہی مہمانوں کو محظوظ کیا گیا۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment