منگل, 12 نومبر 2019


اپوزیشن ایک بار پھرحکومت سےمذاکرات کےلئے تیار

ایمزٹی وی(اسلام آباد)اسلام آباد میں متحدہ اپوزیشن کا اجلاس ہوا جس میں پاناما لیکس کے معاملے پر حکومت کے خلاف سڑکوں پر احتجاجی تحریک کی تجویز مسترد کرنے اور ٹی او آر پر حکومت سے مزید مذاکرات نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا جب کہ اپوزیشن نے پاناما لیکس کی تحقیقات کے لیے پارلیمنٹ میں بل لانے کا فیصلہ کیا۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں وزیراعظم کے استعفیٰ پر کوئی بات نہیں ہوئی۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے سینیٹ میں قائد حزب اختلاف اعتزازاحسن کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ میں پاناما پیپرزانکوائری ایکٹ بل لایا جائے گا جس کا نام پاناما لیکس انکوائری ایکٹ رکھا جائے گا جب کہ بل سینیٹ کے اسی سیشن میں پیش کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں قانون کی حکمرانی ہونی چاہیے لیکن یہاں وزیراعظم کے مقابلے میں وزرا کا رویہ مختلف ہے۔ دوسری جانب تحریک انصاف کے وائس چیرمین شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ٹی او آر کے معاملے پر حکومت کارویہ غیر مناسب تھا کیوں کہ ہمیں کہا گیا کہ وزیراعظم کی واپسی پراپوزیشن سے رابطہ کریں گے لیکن ٹی او آر کے معاملے پر حکومت کی آگے بڑھنے کی نیت نہیں۔ انہوں نے کہا کہ قومی اسمبلی میں بل مسترد ہوا تو صوبائی اسمبلیوں میں پیش کیا جائے گا اور قومی اسمبلی کے ہراجلاس میں ٹی اوآر کا معاملہ اٹھایا جائے گا۔ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کی تمام جماعتوں میں اتفاق ہے.

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment