اتوار, 11 اپریل 2021


شیخ رشید تمام رکاٹوں کوتوڑکرکمیٹی چوک میں داخل

 


ایمزٹی وی(اسلام آباد)تمام تر رکاوٹوں کے باوجود عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے موٹرسائیکل پر سوار ہو کر کمیٹی چوک انٹری دیدی اور ہاتھ میں سگار لیے نجی ٹی وی چینل کی ڈی ایس این جی پر براجمان ہوکر کارکنان سے خطاب شروع کردیا۔
کمیٹی چوک میں کارکنوں سے اپنے خطاب میں شیخ رشید احمد نے کہاکہ میں نے وعدہ کیا تھا، وعدے کے مطابق آگیا ہوں ، اسپیشل برانچ کے لوگ فوٹو لے رہے ہیں ، ان کو نواز شریف کے ساتھ ہی جیل میں پھینکیں گے۔میرےبہنوں اوربھائیوں کےگھرمیں چھاپےمارےجارہےہیں.
انہوں نے کہا کہ میں نے نواز شریف کو چیلنج کیا تھا کہ میں آرہا ہوں تو میں آگیا ہوں۔”آﺅ ہمت ہے تو گرفتار کرو میں آگیا ہوں “۔دونومبر کو بھی ہم یہاں رہیں گے ۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ میں نے کارکنوں سے بھی وعدہ کیا تھا کہ میں جلسہ گاہ پہنچوں گا تو میں پہنچ گیا ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا قصور کیا ہے ہم جمہوریت چاہتے ہیں ۔ دو نومبر کو عوام کا سمند ر ہو گا اور کوئی روک نہیں سکے گا ۔ ”میں ڈرنے والے دن پیدا ہی نہیں ہوا ۔ ہم جمہوریت پسند ہیں ۔ تم نے کہا تھا کہ میں چھپ گیا ہوں میں یہاں ہوں “۔

شیخ رشید نے کہا کہ عوامی تحریک اور دیگر جماعتیں بھی ہمارے ساتھ ہیں ۔ اسپیشل برانچ اور سفید کپڑوں والوں سے قانون کے مطابق حساب لیں گے ۔ اب تک ہمارے ساڑھے چار سو کارکنوں کو گرفتار کیا جا چکا ہے ۔ حکومت نے راولپنڈی بند کر کے بچوں سے پانی بھی چھین لیا ۔
’’سفید پوش کپڑوں میں ملبوس لوگوں کو نواز شریف کے ساتھ جیلوں میں ڈالیں گے‘‘ ۔ سفید کپڑوں والے پکڑیں تو انہیں نیچے گرا لو ۔ کارکن ان کی تصویریں بنا لیں ۔شیخ رشید موٹر سائیکل پر آئے اور موٹر سائیکل پر ہی روپوش ہو گئے ، اپنے خطاب کے دوران وہ کارکنوں کی گرفتاری کی نشاندہی بھی کرتے رہے ۔ویڈیو دیکھیں۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment