جمعرات, 29 اکتوبر 2020


شادی سے قبل چند شرائط لازمی قرار

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)سینیٹ میں قانون انصاف اور مذہبی امور کمیٹی کا مشترکہ اجلاس سینیٹر جاوید عباسی اور سینیٹر حمد اللہ کی زیر صدارت ہوا جس میں سینیٹر تنویر احمد خان نے فیملی قوانین ترمیمی بل 2016پیش کیا ۔بل میں مطالبہ کیا گیا کہ ملک میں ایڈز اور تھیلیسیمیا کی روک تھام کے لیے بلڈ اسکریننگ لازمی قرار دی جائے۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب ،ایران اور دیگر عرب ممالک میں یہ قانون موجود ہے ،شادی سے قبل خون کی اسکریننگ سے بیماریوں پر قابو پایا جا سکتا ہے ۔تنویر احمد خان نے کہا کہ نکاح سے قبل خون کی اسکریننگ غیر شرعی نہیں ہے ،سالانہ 6سے 7ہزار بچے تھیلیسیمیا کا شکار ہو رہے ہیں ۔

ان کا کہنا تھا کہ میرے بل کا مقصد اس بیماری کی روک تھام کے لیے تحقیقات کرانا ہے ۔اس موقع پر سینیٹر حافظ حمد اللہ نے کہا کہ لوگوں کے لیے سہولت دی جائے ،مشکلات دور کی جائیں ،دیہی علاقوں کے لوگوں کی سوچ کو بھی مد نظر رکھا جائے ۔ان کا کہنا تھا کہ شادی سے پہلے بیٹی کے طبی معائنے پر بعض علاقوں میں اعتراضات ہوں گے ۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment