منگل, 19 مارچ 2019


اب بات مزاکرات سے آگے برھ چکی ہے۔ شاہ محمود قریشی

ایمز ٹی وی (اسلام آباد)  حکومتی کمیٹیوں اورتحریک انصاف  کے درمیان مذاکرات اسلام آباد میں جہانگیر ترین کی رہائش گاہ پر ہوئے جس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی نے کہا۔ حکومت سے مزید مذاکرات کی کوئی گنجائش باقی نہیں رہ گئی۔ حکومتی رہنماؤں نے مزید وقت مانگنے کی کوشش کی لیکن مزید ملاقاتیںسودمند دکھائی نہیں دیتیں اور ہمیں مذاکرات سے کچھ نکلتا دکھائی نہیں دے رہا، تحریک انصاف نے قانون اور آئین کےدائرے میں رہتے ہوئے بے پناہ لچک دکھائی اور اپنا موقف جس انداز میں پیش کرنا تھا کردیا ہے۔  وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ دھاندلی کی تعریف پر کوئی اختلاف نہیں ہے، تحریک انصاف نے تینوں نکات پر اپنےموقف سے آگاہ کردیا ہے، ہم لیگی قیادت سے مشورے کے بعد دیگر سیاسی جماعتوں کو اس سے آگاہ کریں گے اور انہیں اعتماد میں لیں گے اور امید ہے کہ مذاکرات کا کوئی نہ کوئی حل ضرور نکلے گا جب کہ اس موقع پر احسن اقبال کا کہنا تھا کہ  تحریک انصاف کے جوڈیشل کمیشن کے مطالبے پر متفق ہیں لیکن اس کو آئین اور قانون کےمطابق رکھنا چاہتے ہیں کیونکہ ایسا نہ ہو کہ کوئی جوڈیشل کمیشن کو عدالت میں چیلنج کردے جب کہ قانونی ماہرین کا بھی کہنا ہے کہ انہیں آئینی و قانونی پہلوؤں کو سامنے رکھتے ہوئے تجاویز دی جائیں۔انھوں نے کہا کہ انتخابات میں دھاندلی کا پتہ لگانے کے لیے تحقیقاتی لائحہ عمل کے قانونی پہلوؤں پر کام ہو رہا ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment