منگل, 27 اکتوبر 2020


راولپنڈی میں امام بارگاہ کے قریب بم دھماکہ ،8 افراد ہلاک متعدد زخمی 

ایمز ٹی وی (راولپنڈی)  راولپنڈی میں امام بارگاہ عون محمد رضوی کے قریب بم دھماکے میں آٹھ افراد ہلاک ہو گئے۔، جمعہ کو چٹیاں ہٹیاں میں ہونے والے دھماکے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت 16 افراد زخمی بھی ہوئے دھماکے کے وقت امام بارگاہ میں محفل میلاد جاری تھی جبکہ شیعہ علما کونسل نے تین روزہ سوگ کا اعلان کیا ۔خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق پولیس افسر راجہ عبدالرشید نے اسے خود کش حملے قرار دیا، تاہم بم ڈسپوزل سکواڈ کے مطابق دھماکا خیز مواد نصب کیا گیا تھا۔عینی شاہدین کے مطابق مبینہ خود کش بمبار نے امام بارگاہ میں داخل ہونے کی کوشش کی تاہم روکے جانے پر اس نے خود کو اڑا لیا۔بم ڈسپوزل اسکواڈ نے حملے کے بعد علاقے کی چیکنگ کے دوران امام بارگاہ کے قریب سے پانچ کلو وزنی بم برآمد کرتے ہوئے اسے ناکارہ بنا دیا۔وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے حملے کی رپورٹ طلب کرلی۔ ان کا کہنا تھا کہ 'ایسے واقعات پاکستانیوں کے حوصلے پست نہیں کرسکتے'۔دھماکے کے وقت راولپنڈی کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال میں ایمر جنسی نافذ کردی گئی۔متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین، پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری، مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ راجہ ناصرعباس اورعوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے دھماکے کی مذمت کی 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment