بدھ, 03 مارچ 2021


پیمرا کا معروف مذہبی اسکالر کے خلاف ایکشن

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد) پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) نےنجی چینل پر نشر ہونے والے پروگرام ’ایسے نہیں چلے گا‘ کے میزبان عامر لیاقت حسین پر پابندی عائد کردی ہے اوراس پابندی کا اطلاق فوری طور پر نافذ العمل ہوگا۔
پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کی جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق پیمرا نے مذکورہ اقدام کئی ہفتوں کی مسلسل نگرانی کے بعد اٹھایا ہے۔ اس عرصے کے دوران عامر لیاقت حسین نے پیمرا الیکٹرانک میڈیا کوڈ آف کنڈکٹ یا ضابطہ اخلاق 2015 کی کئی شقوں کی خلاف ورزی کی۔
نجی چینل کو جاری کردہ حکم نامے کے مطابق عامر لیاقت حسین بول نیوز کے کسی پروگرام (نئے یا نشرِ مکرر) میں بطور میزبان، مہمان، تبصرہ نگار، رپورٹر، ایکٹر، اینکر پرسن، آڈیو یا ویڈیو بیپر یا کسی بھی حیثیت میں شرکت نہیں کرسکیں گے، نہ ہی انہیں اس چینل پر چلنے والی کسی اشتہاری مہم، آڈیو یا ویڈیو ریکارڈنگ کی اجازت ہوگی۔
فیصلے میں مزید کہا گیا ہے کہ اگر نجی چینل نے پیمرا کی ہدایات پر فوری عمل نہیں کیا اور اس پر عامر لیاقت یا اُن کا پروگرام ’’ایسے نہیں چلے گا‘‘ نشر ہوا تو اس کی نشریات فوری طور پر معطل کردی جائیں گی۔ پیمرا حکم نامے کے مطابق عامر لیاقت کو کسی بھی دوسرے ٹی وی چینل پر نفرت انگیز مواد کا پرچار کرنے یا کسی شخص کو ’کافر‘، ’غدار‘، ’توہینِ رسالت‘ یا ’توہینِ مذہب‘ کا مرتکب قرار دینے کی اجازت نہیں ہے کیونکہ پاکستانی آئین اور قانون کے مطابق اس طرح کے حساس معاملات پر فیصلے کا اختیار صرف پارلیمنٹ یا اعلیٰ عدلیہ کے پاس ہے۔
 
مزید برآں فیصلے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اگر عامر لیاقت کسی اور ٹی وی چینل پر اظہارِ رائے کی آزادی کا غلط استعمال اور پیمرا آرڈیننس، رولز و ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرتے پائے گئے تو اس چینل کے خلاف بھی پیمرا آرڈیننس 2002 (ترمیمی ایکٹ 2007) کی دفعہ 27 کے تحت فوری کارروائی کی جائے گی۔ اس حوالے سے پاک سیٹ کو ضروری ہدایات جاری کردی گئی ہیں تاکہ پیمرا کی طرف سے جاری کئے جانے والے احکامات پر ان کی روح کے مطابق عمل ہو۔
واضح رہے کہ پیمرا کو مذکورہ پروگرام اور اینکر کے خلاف سیکڑوں شکایات موصول ہوچکی ہیں جنہیں کراچی، لاہور اور اسلام آباد کی شکایات کونسلز کو ضروری کارروائی کےلئے بھجوایا جارہا ہے۔ پیمرا کے فیصلے کی نقول پاک سیٹ اور پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی کو مکمل عملدرآمد کی خاطر بھجوادی گئی ہیں۔ تمام ڈسٹری بیوشن نیٹ ورکس اور کیبل آپریٹرز کو بھی اس سلسلے میں ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔
عامر لیاقت اور ان کے پروگرام پر پابندی اس وقت تک موثر رہے گی جب تک پیمرا اتھارٹی ان کے خلاف شکایات پر متعلقہ کونسلز کی سفارشات کی روشنی میں کسی حتمی فیصلے پر نہیں پہنچ جاتی۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment