منگل, 27 اکتوبر 2020


سابق صدر نے جواب دیا کہ میں نوازشریف کے خلاف ہوں

 

ایمزٹی وی (اسلام آباد)اسلام آباد میں پیپلزپارٹی کی جانب سے بلائی گئی کثیرالجماعتی کانفرنس کے وقفے کے دوران میڈیا سے بات کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ فوجی عدالتوں کے قیام میں 2 سال کی توسیع پر تمام جماعتیں متفق ہیں، پیپلز پارٹی اپنے تحفظات لے کر پارلیمانی کمیٹی میں آئے، آج کی کانفرنس میں ہماراایک ایجنڈا تھا، پیپلزپارٹی پاناما لیکس، نیوزلیکس اور نوازشریف سے تعلقات پر اپنامؤقف واضح کرے۔
شیخ رشید کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی ایک بڑی جماعت ہے اور ہم چاہتے ہیں کہ نوازشریف کے خلاف اپنا کردار ادا کرے، میں نے پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف زرداری سے کہا ہے کہ آپ اپنی پوزیشن واضح کریں، آپ کو نوازشریف کی انشورنس پالیسی سمجھا جاتا ہے اگر آپ ہمارے ساتھ مل کر نوازشریف کے خلاف سڑکوں پر نکلیں گے تو ہم بھی آپ کے ساتھ تب ہی چلیں گے آپ صاف صاف بتا دیں کہ نوازشریف کے خلاف ہیں یا نہیں، تو سابق صدر نے جواب دیا کہ میں نوازشریف کے خلاف ہوں۔
سربراہ عوامی لیگ کا کہنا تھا کہ میں نے آصف زرداری سے پوچھا آپ نے اعتزازاحسن کو پاناما کیس کے حوالے سے کیوں روکا جب کہ میں خود اعتزاز احسن کے پاس چل کرگیا تھا، جس پر آصف زرداری نے کہا کہ اس معاملے پرعمران خان اور آپ نے مجھے فون نہیں کیا اورنا ہی کوئی رائے لی، میں جلد پاناما لیکس کے حوالے سے ایک اور آل پارٹیز
شیخ رشید کا کہنا تھا کہ پی ایس ایل فائنل میچ دیکھنے کے فیصلے پر آصف زرداری نے مجھے کہا کہ آپ نے بڑی غلطی کی ہے، میں نے کہا کہ نوازشریف اورشہبازشریف نےمیرے ساتھ کچھ کیا تووہ خود ہی بھگتیں گے.

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment