بدھ, 21 اکتوبر 2020


قومی ایکشن پلان کے تحت 65دہشتگردوں کو پھانسی پر لٹکایا گیا، رپورٹ

ایمزٹی وی (آسلام آباد) قومی ایکشن پلان کے تحت پینسٹھ دہشتگردوں کو پھانسی پر لٹکایا گیا اور چونتیس ہزار سے زائد مشتبہ افراد کو حراست میں لیا گیا، وزیرِاعظم کو رپورٹ پیش کر دی گئی۔

دہشتگردوں کے خلاف قومی ایکشن پلان پر عملدرآمد کی رپورٹ وزیرِاعظم کو پیش کردی گئی، جس کے مطابق دہشتگردی میں ملوث پیسٹھ افراد کو پھانسی دی گئی اور مختلف الزامات میں چونتیس ہزار پانچ سترہ افراد کو گرفتار کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق سیکورٹی ایجنسیوں نے ملک بھر میں تیس ہزار تین سو چودہ آپریشن کئے ہیں، جن کے دوران پنجاب سے دوہزار آٹھ سو ستر، سندھ سے سات ہزار ایک سو ترسٹھ ، خیبر پختونخوا سے انیس ہزار آٹھ سو اٹھانوے، بلوچستان سے تین ہزار پانچ سو چھبیس، اسلام آباد سے سات سو ترسٹھ ، آزاد کشمیر سے نو، گلگت بلتستان سے ایک سو تین جبکہ فاٹا سے ایک سو پچاسی افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ لاؤڈ اسپیکر ایکٹ کے تحت چار ہزار ارسٹھ افراد کو گرفتار کیا گیا، بیس ہزار چوبیس افغان مہاجرین کو ڈی پورٹ کیا گیا ہے۔

ہنڈی کے ذریعے رقم منتقل کرنے پر چونسٹھ مقدمات درج کرکے تراسی افراد کو گرفتار کیا گیا۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment