جمعہ, 30 اکتوبر 2020


صدارتی الیکشن، اپوزیشن جماعتیں سر جوڑ کر بیٹھ گئی

ایمزٹی وی(مری)صدارتی الیکشن کے لئے مشترکہ امیدوار لانے کے لئے اپوزیشن سر جوڑ کر بیٹھ گئی، پاکستان مسلم لیگ نون کے صدر شہباز شریف اے پی سی کی سربراہی کر رہے ہیں۔
پاکستان مسلم لیگ ن کی جانب سے عبدالقادر بلوچ، امیرمقام، مریم اورنگزیب، طارق فضل چودھری، سردار ایاز صادق، احسن اقبال سمیت دیگر رہنما شریک ہیں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ کوشش کر رہے ہیں کہ اپوزیشن کا متفقہ امیدوار سامنے لائیں، اے پی سی میں اتفاق رائے پیدا کرنے کی کوشش کریں گے۔
پیپلزپاٹی کی جانب سے سید یوسف رضا گیلانی اور خورشیدہ شاہ کی سربراہی میں ایک وفد شریک ہے جس میں شیری رحمان، قمرالزمان سمیت دیگر رہنما موجود ہیں۔ اسی طرح ایم ایم اے کی طرف سے مولانا فضل الرحمان، لیاقت بلوچ، مولانا عبدالغفور حیدری اور مولانا اویس نورانی بھی اے پی سی میں شریک ہیں۔
پیپلز پارٹی اپنے امیدوار کے لیے دیگر جماعتوں کو قائل کرنے کی کوشش کرے گی۔ خورشید شاہ کے زیرِ صدارت مشاورتی اجلاس ہوا جس میں رضا ربانی، اعتزاز احسن، شیری رحمان، قمر زمان کائرہ اور چودھری منظور شریک ہوئے۔ خورشید شاہ نے مولانا فضل الرحمان، حاصل بزنجو اور محمود اچکزئی سے ٹیلیفونک رابطے بھی کئے۔
ادھر مسلم لیگ ن کا متفقہ امیدوار لانے کے لئے ایاز صادق بھی سرگرم ہیں۔ انہوں نے مولانا فضل الرحمان، خورشید شاہ، اسفند یار ولی اور دیگر سے رابطے کئے۔ پارٹی میں سرتاج عزیز، شاہد خاقان عباسی اور عبدالقادر بلوچ سمیت پانچ نام بطور امیدوار زیرِ غور ہیں۔
پرویز رشید کی جانب سے حمایت کیلئے نواز شریف سے معافی مانگنے کے مشورے کو اعتزاز احسن نے غیر سنجیدہ قرار دیدیا ہے۔ آل پارٹیز کانفرنس سے پہلے مری میں مسلم لیگ ن کا مشاورتی اجلاس بھی ہو گا۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment