ھفتہ, 06 مارچ 2021


ڈاکٹرکوہتھکڑیاں لگانے پر وزیراعظم کا ردعمل

 

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے ڈاکٹر عبد الصمد کو ہتھکڑیوں لگانے والے نیب والے نیب اہلکاروں کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے وزیراعظم عمران خان نے ایک ٹویٹ کا اسکرین شارٹ شیئر کیا جس میں بتایا گیا ہے کہ کیسے ایشیا میں سنسکرت زبان کے واحد پی ایچ ڈی ڈاکٹر عبدالصمد کو ہتھکڑیاں لگا کر عدالت میں پیش کیا گیا۔

وزیراعظم عمران خان نے اس تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ چیئرمین نیب کو اپنے ادارے میں ایسی شرمناک حرکت کے ذمہ دار عناصر کے خلاف کارروائی کرنی چاہیئے ۔ خیال رہے کہ نیب نے ماہر آثار قدیمہ ڈاکٹر عبدالصمد کو درجہ چہارم کے ملازمین کی بھرتیوں کے معاملے پر حراست میں لے رکھا یے ۔ انہیں احتساب عدالت میں ہتھکڑیوں میں پیش کیا گیا تھا جس پر سوشل میڈیا پر بھی نیب کو تنقید کا سامنا ہے نیب کی جانب سے جس ایچ ڈی ڈاکٹر عبدالصمد کو ہتھکڑیاں لگا کر عدالت میں پیش کیا گیا ہے وہ سنسکرت زبان میں پی ایچ ڈی کرنے والی ایشیا اکلوتی شخصیت ہیں ۔

انہوں نے جرمنی کی یونیورسٹی سے صرف28 برس کی عمر میں سکالر شپ پر می ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی جبکہ صدر پاکستان انکی خدمات کے عوض انہیں پرائڈ آف پرفارمنس سے بھی نواز زچکے ہیں ۔ وہ خیبرپختنخواہ کے محکمہ آثار قدیمہ کے سربراہ ہیں اور انتہائی مختصر عرصے میں چترال سمیت دیگر علاقوں سے متعدد مقامات سے آثار قدیمہ کی تلاش کر چکے ہیں ۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment