منگل, 22 اکتوبر 2019


آئندہ انتخابات میں بھی جدیدٹیکنالوجی کااستعمال کھٹائی میں پڑگیا

اسلام آباد: ملک میں آئندہ عام انتخابات میں بھی جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کا معاملہ کھٹائی میں پڑ گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق دھاندلی سے پاک، شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات کے لیے جدید ٹیکنالوجی کے استعمال سے متعلق 2 سال قبل وزارت پارلیمانی امور کو رپورٹس ارسال کی تھیں۔ الیکشن کمیشن نے اپنی رپورٹس میں شفاف انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنانے کے لیے سفارشات بھی دی تھیں، رپورٹس میں الیکشن کمیشن نے الیکٹرانک اور بائیومیٹرک ووٹنگ مشینوں کی خصوصیات بیان کی تھیں۔

وزارت پارلیمانی امور کی نااہلی کے باعث اب تک رپورٹس پر بحث نہ کی جاسکیں کیونکہ الیکشن کمیشن کو آئندہ عام انتخابات کی تیاری کے لئے تین سال کا عرصہ درکار ہوگا، جس کے باعث اب آئندہ انتخابات میں بھی جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کھٹائی میں پڑگیا ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment