جمعہ, 06 دسمبر 2019


پاکستان نےبھارت کانیاسیاسی نقشہ مستردکردیا

اسلام آباد: پاکستان نے بھارت کی جانب سے جاری کردہ نئے سیاسی نقشے کو مسترد کرتے ہوئے نئی دہلی کے اقدام کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی منظورکردہ قراردادوں کی مکمل خلاف ورزی قرار دیدیا۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ ہندوستانی وزارت داخلہ کے 2 نومبرکو جاری کردہ سیاسی نقشے میں جموں وکشمیرکو بھارت کا حصہ دکھایا گیا، نقشے میں گلگت بلتستان اور آزاد جموں وکشمیرکے کچھ حصے بھی بھارت میں شامل کرنے کی کوشش کی گئی، بھارت کی غلط نقشے ناقابل قبول اور سلامتی کونسل کی قراردادوںکی خلاف ورزی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کاکہنا ہے کہ پاکستان ان سیاسی نقشوںکو مسترد کرتا ہے جو اقوام متحدہ کے نقشوں سے متضاد ہیں، ہندوستان کاکوئی بھی قدم اقوام متحدہ میں تسلیم شدہ جموں وکشمیرکی ’’متنازعہ‘‘ حیثیت کو تبدیل نہیں کر سکتا۔ حکومت ہندکے اقدامات مقبوضہ کشمیرکے عوام کے حق خود ارادیت کوغصب نہیں کر سکتے، پاکستا ن مقبوضہ جموں وکشمیرکے عوام کی جائزجدوجہدکی حمایت کرتا رہے گا۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment