جمعہ, 23 اکتوبر 2020


تیونس -عرب سپرنگ کا کامیاب واحد ملک-

ایمز ٹی وی(فارن ڈیسک)تیونس وہ پہلا ملک تھا جہاں سےدنیائے عرب میں چلنی والی تبدیلی کی لہر جسے عرب سپرنگ کے نام یاد کیا جاتا ہے ،
تیونس واحد ملک ہے جہاں عرب سپرنگ کے دوران آنے والی تبدیلی پائیدار ثابت ہوئی ہے۔ ان انتخابات میں سابق حکومت کا حصہ رہنے والے اشخاص بھی حصہ لینے کے اہل ہیں -سن دو ہزار گیارہ میں تیونس کے لوگوں نے صدر زین العابدین بن علی کو ملک چھوڑنے پر مجبور کیا۔ تیونس میں آنے والی تبدیلی تھوڑے ہی عرصے پورے خطے کو اپنی لپیٹ میں لے لیا اور مصر، لیبیا، یمن اور شام میں ایسی ہی تحریکوں نے جنم لیا۔تیونس کے آزاد الیکشن کمشن کے مطابق نئے رجسٹر ہونے والے ووٹروں میں خواتین ووٹروں کا تناسب 49 فیصد ہے۔ جنوری 2014 میں تیونس نے اپنی انتخابی اصلاحات کا اعلان کیا جن کے مطابق انتخابی عمل میں مردوں اور عورتوں کی نمائندگی میں توازن پیدا کیاگیا ہے-زیادہ امیدواروں کا دعویٰ ہے کہ انتخابی مہم کا محور ملکی معیشت ہہے اور ملک میں انقلاب آنے کی بڑی وجہ خراب معیشت تھی۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment