جمعرات, 04 مارچ 2021


مشرف کیس کے3 رُکنی بنچ کا تفصیلی فیصلہ 150 سےزائد صفحات پرمشتمل ہے، ذرائع

اسلام آباد کی خصوصی عدالت سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس میں کن دو ججز نے سزائے موت کے فیصلے کی حمایت کی۔

خصوصی عدالت کے 3 رکنی بینچ نے 17 دسمبر کو پرویز مشرف کو سنگین غداری کیس میں سزائے موت سنائی تھی اور کیس کا فیصلہ دو ایک کی اکثریت سے فیصلہ سنایا تھا۔

ذرائع کے مطابق اکثریتی فیصلہ جسٹس وقار سیٹھ اور جسٹس شاہد فضل کریم نے کیا جب کہ سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس نذر محمد نے فیصلے سے اختلاف کیا۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ پرویز مشرف کی سزائے موت کا فیصلہ 150 سے زائد صفحات پر مشتمل ہے۔

رجسٹرار خصوصی عدالت راؤ عبدالجبار کا کہنا ہے کہ کیس کا تفصیلی فیصلہ کچھ ہی دیر میں جاری کر دیا جائے گا اور فیصلے کی کاپی مقدمے کی پارٹیوں کو دی جائے گی۔

راؤ عبدالجبار کا کہنا ہے کہ فیصلے کے قانونی لوازمات پورے کیے جا رہے ہیں۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment