ھفتہ, 28 نومبر 2020


یکساں نصاب کا نفاذ نئے تعلیمی سال سے شروع ہوگا۔

اسلا م آباد: وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ ملک میں یکساں نصاب کا نفاذ نئے تعلیمی سال سے شروع ہوگا۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود مارٹن ڈاؤاور نٹ شیل کانفرنسز کے زیر ِ اہتمام منعقد ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کورونا وائرس کی جاری وبا کے دوران اسکول جانے والے بچوں کی صحت سے متعلق کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت ملک میں تعلیم کے یکساں نظام کو متعارف کرائے گی تاکہ ملک میں تعلیم کے متعدد نظام کو ختم کیا جاسکے۔گذشتہ 70 سالوں میں حکومت کے زیر انتظام تعلیمی نظام کو نظرانداز کیا گیا تھا اور اگر ہم متعدد سیکھنے کے نظام کو جاری رکھیں گے تو اس نظام میں مزید خرابی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت ملک میں اسکول سے باہر کے بچوں کے داخلے کے لئے ایک خصوصی پروگرام شروع کرے گی۔
کلاس ایک سے پانچ تک کے طالب علموں کو پڑھانے کے لئے ریڈیو کا میڈیم استعمال ہوتا تھا۔

انہوں نے کہا کہ کوڈ 19 ایمرجنسی کی وجہ سے ملک میں تعلیمی اداروں کی بندش سے متعلق فیصلہ لینے کے لئے وزیر تعلیم کے بین الصوبائی اجلاس 23 نومبر کو اسلام آباد میں ہوں گے۔

وزیر تعلیم نے کہا کہ حکومت ملک کی پبلک سیکٹر یونیورسٹیوں کو 100 ارب روپے کے فنڈ مہیا کررہی ہے۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ وزیر تعلیم سندھ سعید غنی سندھ میں نظام تعلیم کے امور کی اصلاح کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا اور پنجاب میں تعلیمی نصاب میں کمی کی گئی ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment