پیر, 19 اگست 2019
×

Warning

JUser: :_load: Unable to load user with ID: 46


ایران جوہری معاہدےکےبعدپاکستان کو3ہزارمیگاواٹ بجلی فراہم کرسکتاہے

ایمزٹی وی(اسلام آباد) پاکستان میں ایران کے سفیرعلی رضاحقیقیان نے کہاہے کہ جوہری معاہدے کے بعدایران پاکستان کو 3 ہزار میگاواٹ بجلی فراہم کرسکتا ہے۔ ایران اور فائیو پلس ون گروپ کے درمیان جوہری معاہدے نے پاکستان سمیت تمام دوست ممالک سے ایران کی تجارت اور اقتصادی تعلقات کے فروغ اکیلئے راہ ہموارکردی ہے۔پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ پر تیزی سے کا م جاری ہے۔معاہدے کے بعد پہلے مرحلے میں پاکستان کیساتھ تجارت5ارب ڈالرتک بڑھ سکتی ہے۔ذرائع کے مطابق گزشتہ روز پاکستان میں ایران کے سفیر علی رضا حقیقیان نے کہاکہ جوہری معاہدے سے پاکستان بھرپور فائدہ اٹھاسکتا ہے۔ ایرانی سفیرکاکہنا تھاکہ ایران نے گیس پائپ لائن پاکستان کی سرحد تک مکمل کرلی ہے، انکا کہنا تھاکہ اس وقت بھی بلوچستان کے سرحدی علاقوں کیلئے76 میگا واٹ بجلی فراہم کر رہاہے،جلدہی اس حجم کو 100 میگاواٹ تک کردیا جائیگا۔ سفیر کا کہنا تھاکہ پاکستان کو ایک ہزارمیگاواٹ بجلی فراہم کرنے کے منصوبہ کی فزیبلٹی رپورٹ بھی تیارہوچکی ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان اورایران کے درمیان معاہدے ہوچکے ہیں جن کی بنیاد پرگوادر،چاہ بہار اور پھر شہید اجائی اور کراچی کی بندرگاہوں کو جڑواں قرار دیا جا چکا ہے، چاہ بہارکوگوادرکے مقابلے میں تعمیرکرنے کی بات درست نہیں۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment