جمعہ, 26 فروری 2021
×

Warning

JUser: :_load: Unable to load user with ID: 46


ملازمین کا معاملہ پھر کھٹائی میں پڑ گیا

ایمزٹی وی (اسلام آباد)وفاقی اسپتالوں کے ملازمین کو ہیلتھ رسک الاؤنس دینے کا معاملہ ایک بار پھر لٹک گیا وزیر خزانہ سے ڈاکٹروں کے وفد کی آج ہونے والی ملاقات میں بھی پیش رفت نہ ہوسکی۔ تفصیلات کےمطابق وفاقی اسپتالوں کے ملازمین نے وزیر خزانہ کی یقین دھانی پر دھرنا تو ختم کردیا مگر اسحاق ڈار چار دن کا کہہ کر15 روز میں بھی ہیلتھ رسک الاونس بحال نہ کرسکے اورمعاملہ عید کے بہانے پھر لٹکا دیاگیا۔ ذرائع کے مطابق وفاقی اسپتالوں کے نمائندوں نے وزیر خزانہ اسحاق ڈار سے آج مذاکرات کئے تاہم ڈاکٹر اور حکومتی نمائندے حتمی نتیجے پر نہیں پہنچے،ملاقات میں ڈاکٹروں نےحکومت کو پرانا حکم نامہ واپس لے کر نیا الاونس دینے یا پھر ہیلتھ رسک الاونس کے نام سے الاونس دینے کی تجویز دی، اور یہ بھی مطالبہ دہرایا کہ منجمد الاؤنس کا نام بدل کریکم جولائی 2015 سے اس کو بحال کیا جائے۔ تاہم وزارت خزانہ کے حکام کا موقف تھا کہ تجویز ماننے پر حکومت کو 42 کروڑ روپے کا اضافی بوجھ اٹھانا پڑے گا، وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ معاملے پر دورہ امریکہ کے بعد غور کروں گا ، انہوں نے ڈاکٹروں کوعید کے ایک ہفتے بعد دوبارہ مزاکرات کے لیے بلالیا

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment