پیر, 27 مئی 2019
×

Warning

JUser: :_load: Unable to load user with ID: 46


اردو کا نفاذ۔۔۔۔ پنجاب حکومت نے عدالت سے رجوع کرلیا

(اسلام آباد) پنجاب حکومت نے سپریم کورٹ کے جاری کئے گئے8 ستمبر کے فیصلے میں ردو بدل کے لئے عدالت سے رجوع کرلیا۔ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل (اے اے جی) رزاق اے مرزا نے پنجاب کے چیف سیکریٹری اور صوبائی سیکریٹری قانون کی جانب سے سپریم کورٹ میں نظرثانی درخواست جمع کروائی، جس میں عدالت سے درخواست کی گئی کہ وہ اپنے حکم نامے پر نظر ثانی کرے جس میں حکومت کو تمام متعلقہ قوانین کو 3 ماہ میں انگریزی سے اردو میں ترجمہ کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے اپنے 8 ستمبر کے فیصلے میں تمام قانون ساز اور اس کی نگرانی کرنے والے اداروں کو آئین کے آرٹیکل 251 کے تحت اردو کو فوری طور پر قومی زبان کی حیثیت میں نافذ کرنے کا حکم جاری کیا تھا۔ی۔سپریم کورٹ میں دائر کی جانے والی نظرثانی درخواست میں کہا گیاکہ صوبائی حکومت نے پہلے سے ہی اقدام اٹھاتے ہوئے مترجم کی 3 آسامیاں تشکیل دی ہیں اور ان تقرریوں کے لیے قانون سازی کے لیے درخواست پنجاب پبلک سروسز کمیشن کو بھیج دی گئی ہے۔ پٹیشن میں کہا گیا ہے کہ پنجاب حکومت کی جانب سے 150 قوانین کا اردو ترجمہ مکمل کیا جاچکا ہے اور یہ قوانین سرکاری ویب سائٹ پر بھی آپ لوڈ کردیئے گئے ہیں، اس میں مزید کہا گیا ہے کہ پنجاب کے قوانین کے اردو ترجمے کی غرض سے ٹھیکیداروں کے حصول کے لیے بھی اخبارات میں اشتہار دیئے جاچکے ہیں واضح رہے سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق اس حوالے سے دی جانے والی حتمی تاریخ 8 دسمبر کو اختتام پذیر ہوجائے گی۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment