جمعہ, 06 دسمبر 2019
×

Warning

JUser: :_load: Unable to load user with ID: 46


امریکی فوجیوں کی عراق روانگی سے شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ کے خلاف جنگ کا نیا مرحلہ شروع

ایمز ٹی وی (فارن ڈیسک)

 امریکی صدر اوباما نےکہا کہ 

امریکہ اور اس کے اتحادی عراقی افواج کی دولت اسلامیہ کے جنگجوؤں کے ہاتھوں پسپائی کے بعد عراقی افواج کی مدد کو آئے ہیں۔ دولت اسلامیہ نے شام اور عراق کے وسیع علاقوں پر قبضہ جما رکھا ہے۔

امریکہ اور اس کے اتحادی عراقی اور کرد افواج کی مدد کے لیے دولت اسلامیہ کے خلاف فضائی کارروائی میں مصروف ہیں ۔

اطلاعات کے مطابق عراقی افواج نے بیجی شہر کے بڑے حصے پر دوبارہ قبضہ حاصل کر لیا ہے۔ اس شہر میں عراق کی سب سے بڑی آئل ریفائنری واقع ہے۔

دولتِ اسلامیہ کے جنگجوؤں نے عراق اور شام کے وسیع علاقوں پر غلبہ قائم کر رکھا ہے

امریکی صدر نے کہا کہ شدت پسندوں کے خلاف فضائی کارروائیوں سے ان کی آگے بڑھنے کی صلاحیت کم ہوئی ہے اور اب ضروری ہے کہ عراقی افواج دولت اسلامیہ کے جنگجوؤں کے خلاف آگے بڑھیں اور ان کو ان علاقوں سے بے دخل کریں جہاں پر انھوں نے قبضہ کر لیا تھا۔

امریکی افواج دولت اسلامیہ کے جنگجوؤں کے خلاف زمینی کارروائیوں میں حصہ نہیں لے رہے بلکہ وہ عراقی افواج کی تربیت اور رہنمائی کر رہے ہیں

پینٹاگون کی طرف سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی افواج نو عراقی اور تین کرد بریگیڈوں کو تربیت مہیا کریں گے اور اس مقصد کے لیے مراکز بنائے جائیں گے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment