جمعہ, 30 اکتوبر 2020


سپہ سالار کا احتساب کے خلاف ایکشن

ایمز ٹی وی (اسلام آباد) پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے پاک فوج کے 12 افسران کو کرپشن کے الزام پر برطرف کردیا۔ بد عنوانی کے الزامات پر برطرف ہونے والوں میں ایک لیفٹننٹ جنرل، 5 بریگیڈیئر ،3 کرنل اور ایک میجر سمیت دیگر نچلے رینک کے افسران شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق برطرف افسران میں لیفٹیننٹ جنرل عبید اللہ خٹک اور میجر جنرل اعجاز شاہد شامل ہیں۔ ذرائع ابلاغ کے ذریعے برطرف کیے جانے والے دیگر افسران میں بریگیڈیئر رشید، بریگیڈیئر سیف اللہ، بریگیڈیئر عامر ، بریگیڈیئراسد شہزادہ کے نام بھی سامنے آئے ہیں جبکہ لیفٹننٹ کرنل حیدر اور میجر نجیب کے نام بھی برطرف افسران میں شامل ہیں۔ برطرف کیے جانے والے افسران نے فرنٹیئر کانسٹیبلری (ایف سی) بلوچستان میں خدمات انجام دیں، ان افسران کو ایف سی سے حاصل ہونے والی مراعات بھی واپس کرنا ہوں گی۔ فوج کی جانب سے افسران کے نام کی تصدیق نہیں کی گئی جبکہ ان کے خلاف کی جانے والی کارروائی کی تفصیلات بھی سرکاری طور پر جاری نہیں کی گئیں۔ واضح رہے کہ 2 روز قبل ہی آرمی چیف نےکوہاٹ میں سگنل ریجمنٹل سینٹر کے دورے کے موقع پر کہا تھا کہ پاکستان کی یکجہتی، سالمیت اور خوشحالی کے لیے بلاتفریق سب کا احتساب ضروری ہے.

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment