بدھ, 21 اکتوبر 2020


حکومت اور اپوزیشن جماعتیں ایک بار پھر آمنے سامنے

ایمزٹی وی (اسلام آباد) قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے آئندہ مالی سال کا بجٹ مسترد کرتے ہوئے کہا کہ عوام کے لیے بجٹ میں کچھ بھی نہیں ہے۔ ذرائع کے مطابق قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے آئندہ مالی سال کا بجٹ مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پچھلے سال کے بجٹ کے چند اعداد وشمار تبدیل کیے گئے ہیں، یہ کسی بھی طرح سے عوامی بجٹ نہیں کیوں کہ اس میں عوام کے لیے کچھ بھی نہیں ہے۔ دوسری جانب پی ٹی آئی کے وائس چیرمین شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حکومت نے خواہشات پر مبنی بجٹ پیش کیا، اسد عمر کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے لیے حکومت کا چوتھا بجٹ تھا، منصوبوں کے اعلان کے باوجود سرماریہ کاری کم ترین رہی اور عوام آج بھی اپنی فلاح و بہبود کے ضامن بجٹ کے منتظر ہیں۔ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ حساب کے ہیر پھیر میں اسحاق ڈار کا کوئی مقابل نہیں ہے، سراج الحق نے کہا کہ بجٹ مفروضوں پر مشتمل ہے اور موجودہ حکومت آئینی تقاضوں کو پورا نہیں کرسکی جب کہ ایم کیوایم نے بجٹ کو امیر دوست قرار دے کر مسترد کردیا۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment