منگل, 17 ستمبر 2019


بچوں کوانسدادپولیوکےقطرےنہ پلانےکی دھمکی

پشاور: وزیر اطلاعات خیبرپختونخوا شوکت یوسفزئی نے بنوں کے تاجروں کی جانب سے انسداد پولیو مہم کے بائیکاٹ پر اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیو کسی بھی صورت دہشت گردی سے کم نہیں ہے۔
 
بنوں کے تاجروں نے ہوشربا مہنگائی سے تنگ آکر پاکستان انسداد پولیو پروگرام کا بائیکاٹ کا اعلان کرتے ہوئے احتجاجاً اپنے بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے نہ پلانے کی دھمکی دی ہے۔
 
پاکستان پولیو پروگرام کے حکام کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ وائرس کے خاتمے کے لیے پولیو ویکسین واحد حل ہے لہذا والدین مفاد پرست عناصر کی باتوں پر کان نہ دھریں۔
 
دوسری جانب وزیر اطلاعات کے پی کے شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ بنوں میں تاجروں کی جانب سے سیلز ٹیکس کو پولیو کے قطرے پلانے سے مشروط کرنے کا مطالبہ سمجھ سے بالاتر ہے اور پولیو کے قطرے پلانے کی مخالفت کر نے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیں گے۔
 
وزیر اطلاعات خیبرپختونخوا نے پولیو کو دہشت گردی جیسا ناسور قرار دیتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ جیسے دہشت گردی کا خاتمہ کیا تھا بالکل اسی طرح ملک اور صوبے کو پولیو فری بنائیں گے۔
 
واضح رہے کہ پولیو وائرس سے متاثر افغانستان نائجیریا اور پاکستان سرفہرست ہیں۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment