پیر, 09 دسمبر 2019


نواز شریف کو کچھ ہوا تو وزیر اعظم مجرم ہوں گے

لاہور: مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ نواز شریف کو کچھ ہوا تو عمران خان نیازی اور پنجاب حکومت مجرم ہوں گے۔
 
مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے سابق وزیراعظم اور پارٹی کے تاحیات قائد نواز شریف کی صحت کو لاحق خطرات کو نظرانداز کرنے کی مذمت اور احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ نواز شریف کو دل، ذیابیطس اور گردوں کے علاوہ متعدد امراض کا سامنا ہے، انہیں 24 گھنٹے خصوصی طبی توجہ کی ضرورت ہے لیکن جان بوجھ کر لاپرواہی اور غفلت برتی جارہی ہے، ان کے علاج میں غفلت کے سنگین نتائج برآمد ہوسکتے ہیں۔
 
صدر مسلم لیگ (ن) کا کہنا تھا کہ نوازشریف کی صحت کے لئے معالج اپنی تشویش سے متعلقہ حکام کو مسلسل آگاہ کررہے ہیں، نوازشریف کے معالج نے چیف سیکریٹری پنجاب کو خط لکھ کر صورت حال پر ایک بار پھر اپنی تشویش سے آگاہ کیا ہے، سیاسی مخالفت پر صحت کی سنگین صورتحال سے دوچار شخص سے علاج چھیننا قتل کی سازش ہے۔
شہباز شریف کا کہنا تھا کہ نوازشریف کی صحت کو خطرات پر مطلوبہ ایمبولنس دینے سے انکار کی خبر عمران حکومت کے انتقام اور چھوٹے پن کا واضح ثبوت ہے، خدانخواستہ ہارٹ اٹیک کی صورت میں وینٹی لیٹر اور دیگر ضروری مشینیں دستیاب نہ ہوں تو ایسی ایمبولنس کا کیا فائدہ؟ نواز شریف کو ہنگامی طبی امداد کی فراہمی میں جان بوجھ کر لاپرواہی اور غفلت کا حکومتی رویہ مجرمانہ ہے، 2 سرکاری اسپتالوں کا امراض قلب کی مناسب مشینوں سے لیس ایمبولینس فراہم کرنے سے انکار سیاسی انتقام کی تازہ مثال ہے۔ شواہد کی بنیاد پر کہہ رہے ہیں کہ اگر نواز شریف کو کچھ ہوا تو عمران خان نیازی اور پنجاب حکومت مجرم ہوں گے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment