پیر, 18 جون 2018


پاک بحریہ و فضائیہ کا لانگ رینج اینٹی شپ میزائل کی فائرنگ کا کامیاب تجربہ

 

ایمزٹی وی(کراچی)بحری مشق رباط کے دوران پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کی جانب سے لانگ رینج اینٹی شپ میزائل کی فائرنگ کا کامیاب تجربہ کیا گیا، جسے آپریشنل صلاحتیوں میں اہم کامیابی قرار دیا جارہا ہے۔
پاک بحریہ کے ترجمان کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز میں کہا گیا کہ پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی اور پاک فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل سہیل امان نے پی این ایس نصر سے میزائلوں کی فائرنگ کا مظاہرہ دیکھا جسے آپریشنل صلاحتیوں میں اہم کامیابی قرار دیا۔
ترجمان پاک بحریہ کے مطابق میزائل JF-17 تھنڈر ایئر کرافٹ اور پاک بحریہ کے F-22P فریگیٹ پی این ایس سیف سے فائر کیے گئے۔
پی این ایس سیف نے سطح سمندر سے سطح سمندر پر مار کرنے والا مزائل C-802 فائر کیا جبکہ پاک فضائیہ کے JF-17 تھنڈر نے ہوا سے سطح سمندر پر مار کرنے والا میزائل C-802AK فائر کیا۔
ترجمان پاک بحریہ کے مطابق دونو ں پلیٹ فارمز سے فائر کیے گئے ان اینٹی شپ میزائلوں نے اپنے اپنے اہداف کو کامیابی سے نشانہ بنایا۔
ترجمان پاک بحریہ کا کہنا تھا کہ بحیرہ عرب میں مزائل فائرنگ کا یہ تجربہ پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کے مشترکہ آپریشنز کی صلاحیت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔
اس موقع پر جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے امیر البحر ایڈمرل ظفر محمود عباسی کا کہنا تھا کہ پاک بحریہ اور پاک فضائیہ ملکی سرحدوں کے تحفظ کی مکمل صلاحیت رکھتی ہیں۔
بعدِ ازاں پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کی جانب سے مشترکہ فلائی پاسٹ کا شاندار مظاہرہ بھی پیش کیا گیا، جبکہ پاکستان نیوی کے سربراہ نے اس موقع پر پاکستان نیول فلیٹ کی آپریشنل تیاریوں پر مکمل اطمینان کا بھی اظہار کیا۔

بحری مشق رباط کے دوران پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کی جانب سے لانگ رینج اینٹی شپ میزائل کی فائرنگ کا کامیاب تجربہ کیا گیا، جسے آپریشنل صلاحتیوں میں اہم کامیابی قرار دیا جارہا ہے۔

پاک بحریہ کے ترجمان کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز میں کہا گیا کہ پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی اور پاک فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل سہیل امان نے پی این ایس نصر سے میزائلوں کی فائرنگ کا مظاہرہ دیکھا جسے آپریشنل صلاحتیوں میں اہم کامیابی قرار دیا۔

ترجمان پاک بحریہ کے مطابق میزائل JF-17 تھنڈر ایئر کرافٹ اور پاک بحریہ کے F-22P فریگیٹ پی این ایس سیف سے فائر کیے گئے۔

مزید پڑھیں: پاک سعودی بحری افواج کی پندرہ روزہ مشق اختتام پذیر

پی این ایس سیف نے سطح سمندر سے سطح سمندر پر مار کرنے والا مزائل C-802 فائر کیا جبکہ پاک فضائیہ کے JF-17 تھنڈر نے ہوا سے سطح سمندر پر مار کرنے والا میزائل C-802AK فائر کیا۔

ترجمان پاک بحریہ کے مطابق دونو ں پلیٹ فارمز سے فائر کیے گئے ان اینٹی شپ میزائلوں نے اپنے اپنے اہداف کو کامیابی سے نشانہ بنایا۔

ترجمان پاک بحریہ کا کہنا تھا کہ بحیرہ عرب میں مزائل فائرنگ کا یہ تجربہ پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کے مشترکہ آپریشنز کی صلاحیت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان کی بلیو اکانومی اور امیر البحر کا شکوہ

اس موقع پر جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے امیر البحر ایڈمرل ظفر محمود عباسی کا کہنا تھا کہ پاک بحریہ اور پاک فضائیہ ملکی سرحدوں کے تحفظ کی مکمل صلاحیت رکھتی ہیں۔

بعدِ ازاں پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کی جانب سے مشترکہ فلائی پاسٹ کا شاندار مظاہرہ بھی پیش کیا گیا، جبکہ پاکستان نیوی کے سربراہ نے اس موقع پر پاکستان نیول فلیٹ کی آپریشنل تیاریوں پر مکمل اطمینان کا بھی اظہار کیا۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment