پیر, 23 ستمبر 2019


زہرہ شاہدقتل کیس میں ملزمان کی سزائے موت عمر قید میں تبدیل

 
کو تبدیل کردیا، اے ٹی سی نےدونوں مجرموں کو موت اور جرمانےکی سزا سنائی تھی
 
کراچی : سندھ ہائی کورٹ نے زہرہ شاہدقتل کیس میں ملزمان کی سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کردیا، اے ٹی سی نےدونوں مجرموں کو موت اور جرمانےکی سزا سنائی تھی۔
 
سندھ ہائی کورٹ میں پاکستان تحریک انصاف کی رہنما زہرہ شاہد قتل کیس میں ملزمان کی سزا کیخلاف اپیل پر سماعت ہوئی ، سماعت میں وکیل ملزمان نے کہا میرےموکلین کیخلاف مقدمہ واقعےکے9 دن بعددرج کیاگیا اور گواہوں کے بیانات میں تضاد ہے۔
 
عدالت نے ملزمان کی سزا کیخلاف اپیل جزوی طورپرمنظور کرتے ہوئے سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کردیا۔
 
پی ٹی آئی کی رہنما زہرہ شاہد کے قتل میں سزا پانے والے ملزمان راشدٹیلر، زاہد عباس زیدی نے سزا کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں اپیل کی تھی۔
 
 
یاد رہے انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ایم کیو ایم کے کارکن راشد ٹیلر اور زاہد عباس کو سزائے موت سنائی تھی جبکہ جبکہ 2 مزید ملزمان عرفان اور کلیم کو عدم ثبوت کی بنیاد پر بری کردیا تھا۔
 
واضح رہے کہ پاکستان تحریکِ انصاف کی رہنما زہرہ شاہد کو عام انتخابات کے چند روز بعد 18 مئی 2013 کو ان کے گھر کے باہر قتل کیا گیا تھا، حکومت نے ملزمان کی نشاندہی کے لیے 25 لاکھ روپے انعام رکھا تھا۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment