جمعرات, 28 مئی 2020


کراچی کی 11 یوسیز کو سیل کرنے کا فیصلہ چند گھنٹوں بعد واپس

 
 
 
 
کراچی : سندھ حکومت نے کورونا وائرس کا پھیلاؤروکنے کے لیے کراچی کی 11 یونین کونسلز کوعجلت میں سیل کرنے کا فیصلہ چند گھنٹے بعد واپس لے لیا، ڈپٹی کمشنر نے ایک وزیر کے کہنے پر یونین کونسل سیل کرنے کا حکم جاری کیا تھا۔
 
ہفتے کے روز کراچی کے ضلع شرقی کے ڈپٹی کمشنر نے کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے 11 یونین کونسلز کو مکمل سیل کرنے کا حکم دیا تھا تاہم چند گھنٹے گزرنے کے بعد حکومت سندھ کی جانب سے انہیں یہ نوٹیفکیشن واپس لینے کی ہدایت کی گئی ہے۔
 
ذرائع کے مطابق ڈپٹی کمشنر ایسٹ نے ایک وزیر کے کہنے پر یونین کونسل سیل کیں تاہم اس فیصلے پر وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو اعتماد میں نہیں لیا گیا تھا۔
 
 
اس حوالے سے صوبائی وزیر بلدیات سید ناصر حسین شاہ نے میڈیا کو بتایا ہے کہ سندھ حکومت نے کراچی میں یونین کونسلز مکمل سیل کرنے کا حکم واپس لینے کی ہدایت کردی ہے۔
 
انہوں نے بتایا کہ جن گلی محلوں میں کورونا کیسز سامنے آئے ہیں صرف انہیں سیل کیاجائے گا کیوں کہ اتنے بڑے علاقوں کو سیل کرنا عوام کے لیے تکلیف دہ ہوگا۔
 
یاد رہے کہ کرونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر ڈپٹی کمشنر شرقی (ایسٹ) نے کراچی کی 11 یونین کونسلوں کو سیل کرنے کا حکم جاری کردیا۔ ڈپٹی کمشنر کی ہدایت پر رینجرز اور پولیس کی بھاری نفری نے مختلف علاقوں کی 11 یونین کونسلز کو سیل کیا اور عوام کو ہدایت کی کہ وہ گھروں میں ہی رہیں۔
 
اُن کا کہنا تھا کہ مذکورہ یوسیز میں 150 سے زائد کیسز رپورٹ ہوئے اسی وجہ سے انہیں سیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا، علاقے میں رینجرز اور پولیس کی بھاری نفری تعینات کی جائے گی اور داخلی خارجی راستے بند کیے جائیں گے جبکہ کورونا وائرس کے حوالے سے ملک میں ہفتے کا دن ہولناک رہا ،ایک ہی دن میں 15اموات اور 229نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment