جمعرات, 15 اپریل 2021


آئی سی سی چیئرمین ششانک منوہر کی واپسی

 

ایمزٹی وی(اسپورٹس) آئی سی سی چیئرمین ششانک منوہر نے بورڈ کی جانب سے اپنی حمایت میں متفقہ قرار داد کے بعد چیئرمین کے طور پر ذمہ داریاں نبھانے پر رضا مندی ظاہر کر دی ہے۔
اس ہفتے کے آغاز میں بورڈ ارکان کی جانب سے ان کی حمایت میں قرار داد منظور کی گئی تھی جس میں ان سے مطالبہ کیا گیا تھا کہ وہ انتظامی اور مالی پابندیوں کی اطلاق تک چیئرمین کے عہدہ سے مستعفی ہونے کا فیصلہ ملتوی کر دیں۔ بورڈ کے فیصلے پر ششانک منوہر نے کہا کہ بورڈ آف ڈائریکٹرز کی جانب سے اپنے لیے جذبات اور اعتماد کے اظہار کی قدر کرتا ہوں، اسی بناء پر اپنی ذاتی وجوہات ہونے کے باوجود میں نے قرارداد کی تکمیل تک ذمہ داریاں سنبھالنے پر آمادگی ظاہر کی ہے، اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر معاملات کی اچھے انداز میں منتقلی اور آئی سی سی کی گورننس پر کام جاری رکھوں گا۔
واضح رہے کہ 59 سالہ ششانک منوہر نے ہی بگ تھری کے غیرمنصفانہ ہونے کے خلاف آواز اٹھائی تھی اور انہی کی کوششوں سے گزشتہ ماہ آئی سی سی نے نیا آئین متعارف کروایا تھا جس میں بھارت، آسٹریلیا اور انگلینڈ کرکٹ بورڈز کی اجارہ داری کو ختم کیا گیا تھا اور 15 مارچ کو عہدہ سنبھالنے کے صرف 8 ماہ بعد ذاتی وجوہات کی بنا پر استعفیٰ دے دیا تھا۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment