پیر, 24 فروری 2020


مہم جونےفضامیں رہنےکااپنا ہی ریکارڈتوڑدیا

جنوبی افریقا کے ایک  شخص  نے فضا میں رہنے کا اپنا ہی ریکارڈ توڑنے کے لیے ایک ڈرم میں رہنا شروع کردیا تاحال انہیں دو ماہ گزر چکے ہیں

افریقی میڈیا کے مطابق  مہم جو ورنن کروگر نے زمین سے 25 میٹر بلندی پر ایک کھمبا گاڑا جس پر پانی کا ایک پیپا (بیرل) ٹکا دیا، ورنن مسلسل دو ماہ سے اس میں رہائش پذیر ہیں اور کئی برس قبل قائم اپنا ہی ریکارڈ توڑنے میں کوشاں ہیں۔

وہ 14 نومبر سے وہیں موجود ہیں۔ یہ ڈرم اتنا تنگ ہے کہ وہ مشکل سے ہی اس میں سماسکتے ہیں لیکن ساری تکلیف اپنا ہی ایک ریکارڈ توڑنے کے لیے کر رہے ہیں بس چند دن بعد وہ اپنا ریکارڈ برابر کردیں گے اور 1997ء میں قائم اپنا ہی ریکارڈ توڑیں گے اور یوں وہ دوبارہ گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں اپنا نام شامل کرواسکیں گے۔

مہم جو ورنن کروگر کے لیے اب شراب کا یہ ڈرم ہی رہائشی کمرا ہے جہاں وہ مشکل سے رہتے ہیں اور جگہ کی تنگی کے سبب دن بھر انہیں ہڈیوں اور کمر کے درد کا سامنا رہتا ہے اس لیے کہ وہ سوتے وقت ہاتھ پاؤں تک نہیں پھیلا سکتے۔

کروگر نے بتایا کہ ڈرم میں بیٹھنا آسان ہے لیکن اتنی تنگی میں سونا بہت مشکل ہے،‘ ورنن کروگر کے مطابق انہیں عین اس پوزیشن میں سونا پڑتا ہے جیسے ماں کے پیٹ میں بچہ سکڑی ہوئی پوزیشن میں ہوتا ہے، وہ رفع حاجت بھی وہیں کرتے ہیں جو ایک سوراخ سے پھسل کر پائپ کے ذریعے نیچے اترجاتی ہے، نیچے موجود ان کی ٹیم انہیں پانی اور کھانا ایک بالٹی کے ذریعے اوپر پہنچاتی ہے۔

کروگر کو اس کا خیال چھٹیوں میں اس وقت آیا جب وہ پام کے درخت پر چڑھ کر بیٹھے تھے۔ ورنن نے سوچا کیا کوئی اونچے مقام پر کسی ڈبے میں بیٹھ کر وقت گزار سکتا ہے؟ اس سے قبل انڈونیشیا میں یہ ریکارڈ قائم ہوا تھا۔

قبل ازیں وہ ایسے ہی ڈرم میں بیٹھنے کا 54 روزہ ریکارڈ قائم کرچکے ہیں۔ اس بار وہ ڈرم میں بیٹھنے کا 67 روزہ ریکارڈ قائم کرنا چاہتے ہیں۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment