جمعرات, 29 اکتوبر 2020


سپریم کورٹ نے ریٹرننگ افسر کا نتیجہ مسترد کردیا

ایمزٹی وی(اسلام آباد) سپریم کورٹ نے پنڈی بھٹیاں میونسپل کمیٹی حافظ آباد کے بلدیاتی انتخابات میں جنرل وارڈ نمبر 18 میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کرنے کافیصلہ کالعدم کردیا۔چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے جنرل وارڈ نمبر18 میں ریٹرننگ افسر کی طرف سے دوبارہ گنتی کے بعد جاری کیے گئے نتیجے کوکالعدم قرار دیتے ہوئے پہلی گنتی میں زیادہ ووٹ لینے والے امیدوار کو کامیاب قرار دے دیا۔

 

عدالت نے قرار دیاکہ ریٹرننگ افسرکے پاس یہ اختیار نہیں کہ ایک دفعہ انتخابی نتیجہ مرتب ہونے کے بعد دوبارہ گنتی کرائے اور نیا نتیجہ جاری کرے،ایک دفعہ نتیجہ مرتب ہوجانے کے بعد دوبارہ گنتی کا اختیار الیکشن ٹربیونل کے پاس چلاجاتاہے۔

 

علاوہ ازیں ملتان میں مخصوص نشستوں پر لیبرسیٹ کے لیے امیدوار ثنا اللہ کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کے خلاف درخواست کی سماعت کرتے ہوئے عدالت نے الیکشن روکنے کی درخواست مستردکردی۔ عدالت نے امیدوار ثنا اللہ کے کا غذات نامزدگی منظورکرنے کے ریٹرننگ افسرکے فیصلے کیخلاف درخواست باقاعدہ سماعت کے لیے منظور کرکے فریقین کو نوٹس جاری کر دیے۔ وکیل نے عدالت کو بتایاکہ امیدوار ثنا اللہ نے اثاثے چھپائے ہیں لیکن ریٹرننگ افسر نے ثبوت کے باجود انھیں الیکشن لڑنے کی اجازت دی ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment