اتوار, 29 نومبر 2020


عدالت عظمیٰ کے ماحول میں تبدیلی

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)پانامہ کیس میں ہلکے پھلکے جملوں سے ماحول خوشگوار رہا۔ سوال تھا کہ جھوٹ بولنے والا رکن اسمبلی نہیں بن سکتا تو پھر کیا سارے شوہروں کی رکنیت خطرے میں پڑ گئی؟ جسٹس کھوسہ نے کنوارے لوگوں کو سچا کہہ ڈالا تو شیخ رشید مسکرا دیئے۔
پاناما کیس میں سوال اٹھ گیا بے ایمانی کا مطلب آخر ہے کیا؟ جسٹس شیخ عظمت کہنے لگے کہ جواب کسی فریق نے نہیں دیا۔ جسٹس عظمت نے یہ بھی پوچھ لیا کہ کیا جھوٹ بولنے والا رکن اسمبلی نہیں بن سکتا؟ انھوں نے ساتھ ہی کہا کہ بیوی سے تو ہر شخص جھوٹ بولتا ہے ، دفتر میں بیٹھ کر کہا جاتا ہے راستے میں ہوں۔ اس پر جسٹس کھوسہ کہنے لگے کہ جو شادی شدہ نہیں وہ جھوٹ بھی نہیں بولتا۔
ریمارکس سن کر کنوارے شیخ رشید زیر لب مسکرا دیئے۔ عدالت نے نیب پراسیکیوٹر گمراہ کرنے لگے۔ دوران سماعت اٹارنی جنرل کی ٹانگ دکھنے لگی تو جسٹس اعجاز افضل نے بیٹھ کر دلائل دینے کو کہہ دیاتو نعیم بخاری نے اپنی نشست پیش کر دی ۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment