جمعرات, 16 اگست 2018


سینیٹ کے نومنتخب 52 سینیٹرز نے رکنیت کا حلف اٹھالیا

 

سینیٹ کے نومنتخب 52 سینیٹرز نے رکنیت کا حلف اٹھالیا

ایمزٹی وی(اسلام آباد)فاٹا اور ایم کیو ایم کے سینیٹرز نے بھی اپوزیشن جماعتوں کے متفقہ امیدوار صادق سنجرانی اور سلیم مانڈوی والا کی حمایت کا اعلان کردیا ہے۔ زرائع کے مطابق سینیٹ میں نومنتخب 52 سینیٹرز نے رکنیت کا حلف اٹھالیا ہے اور ایوان بالا کے چیرمین اور ڈپٹی چیرمین کے الیکشن آج شام 4 بجے ہوں گے۔ پیپلز پارٹی، تحریک انصاف اور بلوچستان کے آزاد سینیٹرز نے گزشتہ روز چیرمین کے لیے صادق سنجرانی اور ڈپٹی چیرمین کے لیے سلیم مانڈوی کا نام پیش کیا تھا۔ آج فاٹا اور ایم کیو ایم کے سینیٹرز نے بھی صادق سنجرانی اور سلیم مانڈوی والا کی حمایت کا اعلان کردیا جس کے نتیجے میں اپوزیشن مضبوط اور حکمراں جماعت ن لیگ کی کی پوزیشن کمزور دکھائی دیتی ہے۔ فاٹا سے منتخب سینیٹر ہدایت اللہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ہمارے تمام 8 ووٹ صادق سنجرانی کو ملیں گے۔ ادھر ایم کیو ایم کے سینیٹرعتیق شیخ نے بھی کہا کہ چیئرمین سینیٹ کے لیے ایم کیو ایم پیپلز پارٹی کے حمایت یافتہ امیدواروں کو ووٹ دے گی۔ اپوزیشن کے چیئرمین سینیٹ کے امیدوار صادق سنجرانی اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ امیدوار سلیم مانڈوی والا نے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے ہیں۔ سینیٹ کا ایوان 104 ارکان پر مشتمل ہے جس میں ن لیگ کے 33، پی پی پی 20، پی ٹی آئی 12، آزاد 17، ایم کیو ایم 5، نیشنل پارٹی 5، جے یو آئی 4، پشتون خوا میپ 3، جماعت اسلامی 2 اور بی این پی مینگل، فنکنشنل لیگ اور اے این پی کا ایک ایک سینیٹر ہے۔ امیدوار کو جیتنے کے لیے 53 ووٹ درکار ہیں۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment