جمعہ, 26 فروری 2021


پاکستان نے اقوام متحدہ میں ایجنڈا پیش کردیا

ایمزٹی وی(اسلام آباد)وزیر اعظم نواز شریف نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سےخطاب کرتے ہوئے چار نکاتی ایجنڈا پیش کردیا۔ایجنڈے میں خطے میں امن کے لئے چار نکات شامل ہیں جن میں کشمیر کو غیرفوجی علاقہ قرار دینے ، طاقت کا استعمال نہ کرنے ، سیز فائر معاہدے پر عمل اور سیاچن سے فوجیں واپس بلانے کی تجاویز شامل ہیں۔ بھارتی جارحیت کے حوالے سے وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان کا اولین ہمسایہ خطے میں امن نہیں چاہتا ، کنٹرول لائن کی مسلسل خلاف ورزیاں ہو رہی ہیں۔ امن کیلئے نئے اقدامات کی شروعات چاہتے ہیں ، بھارت 2003 کے جنگ بندی معاہدے کی مکمل پاسداری کرے۔ نواز شریف نے کہا کہ خطے میں امن کیلئے مسئلہ کشمیر کا حل ضروری ہے ، تنازع کا حل نہ ہونا اقوام متحدہ کی ناکامی ہے ، عالمی ادارے کی قراردادوں پر عمل ہونا چاہئے۔ نوازشریف کا کہنا تھا کہ تمام مسائل مذاکرات کے ذریعے حل کرنا چاہتے ہیں ، دونوں ممالک کو مل بیٹھ کر تنازعات کا حل تلاش کرنا چاہئے۔ کی جائے ، انہوں نے سیز فائر معاہدے پر عمل اور ساچن سے غیرمشروط طور پر پاک بھارت فوجیں واپس بلانے کی تجویز بھی دی۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment