ھفتہ, 13 جولائی 2024


ملک کی دوبڑی میڈیکل جامعات کاایسوسی ایشن آف ہیلتھ کیئرسےسمجھوتہ برائےمفاہمت پردستخط

کراچی: ملک کی دو بڑی میڈیکل جامعات ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز اور جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی نے ہیلتھ کیئر کے شعبے میں کام کرنے والی افرادی قوت کی تعلیم و تربیت کیلئے قائم بین الا قوامی غیر منافع بخش تنظیم ایسوسی ایشن آف ہیلتھ کیئر سے سمجھوتہ برائے مفاہمت پر دستخط کیے ہیں۔

جس کے نتیجے میں ملکی اور بین الا قوامی سطح پر مختصر اور طویل المیعاد ٹریننگ کے بعد مختلف ممالک کے طبی شعبوں کی ضرورت پوری کی جائے گی۔

سمجھوتے پر ڈاؤ یونیورسٹی کی جانب سے رجسٹرار ڈاکٹر اشعر آفاق اور جے ایس ایم یو کی جانب سے رجسٹر ارا عظم خان نے دستخط کیے جبکہ ڈاکٹر جمیل الرحمن نے نمائندگی کی۔

ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے وائس چانسلر پروفیسر سعید قریشی اور جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر امجد سراج میمن اور انڈس اسپتال کے سی ای او ڈاکٹر عبد الباری بھی موجود تھی۔ پروفیسر سعید قریشی نے کہا کہ دنیا بھر میں ڈاکٹر اور ہیلتھ کیئر کے شعبے میں انسانی وسائل کی کی شدید کمی ہے جسے پورا کرنے کیلئے کسی واسطے کی ضرورت طویل عرصے سے محسوس کی جارہی تھی۔

پروفیسر ڈاکٹر امجد سراج میمن نے کہا کہ اگر ہم اپنے الائیڈ ہیلتھ شعبے کے لوگوں کو اسکلڈ اور ٹرین کریں تو ہم دنیا کے ممالک کی ضرورت پوری کر سکتے ہیں۔ ایسوسی یشن آف ہیلتھ کیئر پروفیشنل گلوبلی کے بانی ڈاکٹر جمیل الرحمن اور ڈاکٹر مظہر شیخ نے کہا کہ پاکستان میں ڈاکٹرز اور ہیلتھ کئیر میں بڑی تبدیلی آرہی ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment