پیر, 01 جون 2020


آئی ایم ایف نےکوروناوائرس کےباعث قرض فراہمی کی حد دوگنی کردی

 
 
 
 
 
واشنگٹن : آئی ایم ایف نےکوروناوائرس کےباعث قرض فراہمی کی حد دوگنی کردی ہے، جس کے بعد آئی ایم ایف کی قرض فراہمی کی حد آئندہ سال سے دس کھرب ڈالرہوجائے گی۔
 
تفصیلات کے مطابق آئی ایم ایف کورونا وائرس سے لڑنےکیلئے ممالک کی مدد کیلئے کوشاں ہیں ، جی ٹوئنٹی ممالک وزرائے خزانہ اورآئی ایم ایف کا مشترکہ اجلاس ہوا ، اجلاس میں کورونا وائرس کےنقصانات کےحوالےسےاہم فیصلے کئے گئے۔
 
کرسٹلینا جارجیوا نے بتایا کہ آئی ایم ایف نےقرض فراہمی کےحجم کوڈبل کر دیا ہے، جس کے بعد آئی ایم ایف کی قرض فراہمی کی صلاحیت اب دس کھرب ڈالر ہوگئی ہے، قرض فراہمی کانیا دورجنوری دوہزاراکیس سے ہوگا اورتین سال تک جاری رہےگا۔
 
ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کےبورڈنےسی سی آرٹی کےبارےمیں ریفارمزکی منظوری بھی دی ہے، اس ریفارم کےتحت غریب ممالک فنڈ کوقرضوں کی واپسی کےبجائےسی سی آرٹی فنڈ میں رقم جمع کروائیں گے۔
 
آئی ایم ایف کی ایم ڈی نے مزید کہا کہ سی سی آرٹی فنڈ میں چالیس کروڑ ڈالر دستیاب ہیں اورآئی ایم ایف اس کوبڑھاکرایک ارب ڈالر کرناچاہتاہے۔
 
آئی ایم ایف کی ایم ڈی کرسٹلینا جارجیوا نےدرخواست دی ہےکہ جی نوئنٹی ممالک بائی لیٹرل قرضوں کےبارےمیں جلدفیصلہ کریں، عالمی معیشت کا پہیہ رک چکاہے، جی20کومشکل حالات سے دوچار ممالک کےلیےجلد فیصلہ کرناہوگا۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment