ھفتہ, 15 اگست 2020


موڈیز اسٹیٹ بینک کے کورونا وائرس سے متعلق اقدامات کی معترف

 
 
 
اسلام آباد : عالمی ریٹنگ ایجنسی موڈیز نے کورونا وائرس کے حوالے سے اسٹیٹ بینک آٖف پاکستان کے اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے کہا اقدامات کے باعث بینک زیادہ سستےقرضےدینےاورمعیشت کوسہارا دینے کےقابل ہوں گے۔
 
تفصیلات کے مطابق عالمی ریٹنگ ایجنسی موڈیز نے کورونا وائرس کے حوالے سے اسٹیٹ بینک آٖف پاکستان کے اقدامات پر بیان میں کہا ہے کہ اقدامات پاکستانی بینکوں پرکورونا کے منفی اثرات کم کرنے میں مدد دیں گے۔
 
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسٹیٹ بینک نےشرح سودمیں 1.5 فیصد کی کمی کی ہے اور بینکوں کےکیپیٹل کنزرویشن بفر میں بھی ایک فیصد کی کمی کی گئی، اقدامات سے معاشی سست روی کےدوران بینکوں پر اثرات کم ہوں گے۔
 
عالمی ریٹنگ ایجنسی نے کہا ہے کہ پاکستان کی معاشی شرح نمورواں سال 2سے2.5فیصد تک رہنے کا امکان ہے، اس سے پہلے موڈیز نے2.9فیصد شرح نمو رہنے کی پیش گوئی کی تھی۔
 
موڈیز نے کہا کہ شرح نمو میں کمی کی وجہ کورونا کی عالمی وبا ہے، خدمات کی کھپت پرنقل وحمل کی پابندیوں کے باعث کمی آئے گی، ایسے میں ٹیکسٹائل سیکٹر کو سپلائی چین میں تعطل اورآڈرز کے مؤخر ہونے سے نقصان ہوگا۔
 
شرح نمومیں کمی کی وجہ کورونا کی عالمی وبا ہے۔خدمات کی کھپت پرنقل وحمل کی پابندیوں کےباعث کمی آئے گی۔ایسےمیں ٹیکسٹائل سیکٹرکوسپلائی چین میں تعطل اورآڈرزکے مؤخرہونےسےنقصان ہوگا۔
 
عالمی ریٹنگ ایجنسی کا بیان میں کہنا تھا کہ شرح سود میں کمی کریڈٹ گروتھ متوازن رکھنے کا باعث بنے گی، کیپیٹل کنزرویشن بفرمیں کمی سےبینکنگ سسٹم میں 800ارب کااضافہ ہوگا۔
 
موڈیز کا کہنا تھا کہ اسٹیٹ بینک کے اقدام سےبینکوں کی قرضےدینےکی صلاحیت میں اضافہ ہوگا اور قرضوں میں اصل کو مؤخر کرنے کی سہولت سے رسک میں کمی آئے گی۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment