منگل, 19 جنوری 2021


محمود خان اچکزئی مشکل میں پڑ گئے

ایمزٹی وی(اسلام آباد) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے متنازع تقریر پر پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی کو نوٹس جاری کرتے ہوئے یکم ستمبر کو طلب کرلیا۔ ذرائع کے مطابق چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) سردار رضا محمد نے پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی کی جانب سے قومی اسمبلی میں متنازع تقریر کے خلاف شہری وحید کمال کی درخواست کی سماعت کی۔ درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ آرٹیکل 19 کے تحت افواج پاکستان پر کوئی الزام تراشی نہیں کی جاسکتی جب کہ محمود اچکزئی نے قومی اسمبلی میں افواج پاکستان کو بدنام کرنے کی کوشش کی اور اس سے قبل وہ خیبرپختونخوا کو افغانستان کا حصہ بھی قرار دے کر ملکی وحدت کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر چکے ہیں۔

درخواست گزار نے چیف الیکشن کمشنر نے استدعا کی کہ ملکی وحدت اور اداروں کو بدنام کرنے پر محمود اچکزئی کو قومی اسمبلی کی رکنیت سے نااہل قرار دیا جائے جب کہ چیف الیکشن کمشنر نے درخواست کی سماعت 17 اگست تک ملتوی کرتے ہوئے محمود اچکزئی کو یکم ستمبر کو طلب کرلیا۔

واضح رہے کہ سانحہ کوئٹہ کے بعد قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے محمود اچکزئی کا کہنا تھا کہ ہر سانحے کے بعد بھارتی خفیہ ایجنسی “را” پر الزام عائد کردیا جاتا ہے جب کہ کوئٹہ میں جگہ جگہ ایف سی اہلکار موجود ہونے کے باوجود بلوچستان بار کے صدر کا قتل اور سول اسپتال میں دھما کا ہونا خفیہ اداروں کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment