منگل, 24 نومبر 2020


سندھ پبلک سروس کمیشن میں اب کوئی بھرتی نہیں ہوگی

ایمزٹی وی(اسلام آباد)سپریم کورٹ نے سندھ پبلک سروس کمیشن کو نئی بھرتیوں سے روک دیا ہے۔ عدالت نے کہا کہ از خود نوٹس کیس کا فیصلہ ہونے تک نئی بھرتیاں نہ کی جائیں۔

چیئرمین سندھ پبلک سروس کمیشن کی اہلیت سے متعلق ازخود نوٹس کی سماعت سپریم کورٹ میں ہوئی۔ چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سماعت کی۔

عدالت نے از خود نوٹس کیس کے فیصلہ تک کمیشن کو نئی بھرتیوں سے روکنے کا حکم دیا۔ اس پر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل سندھ نے کہا کہ بھرتیاں نہ کی گئیں تو سسٹم بیٹھ جائیگا۔

جسٹس خلجی عارف حسین نے ریمارکس دیے کہ ملک میں کوئی سسٹم ہے یا نہیں؟ ایسے شخص کو چیرمین لگادیا گیاہے جو مطلوبہ اہلیت نہیں رکھتا۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ جب تک مطمئن نہیں ہوتے کمیشن کو کام نہیں کرنے دینگے، 15روز میں کوئی قیامت نہیں آجائیگی۔

عدالت نے مقدمے کی سماعت 3نومبر تک ملتوی کردی

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment