جمعرات, 25 فروری 2021


پاکستان میں عالمی اداروں کا مزید تعاون بہت ضروری ہے، عالمی ادارہ خوراک   

ایمزٹی وی(اسلام آباد) پاکستان میں عالمی ادارہ برائے خوراک ’ورلڈ فوڈ پروگرام‘ کی کنٹری ڈائریکٹر مس لولا کاسترو نے کہا ہے کہ خوراک کی رسائی پر ہرانسان کا بنیادی حق ہے اور عالمی ادارہ خوراک شمالی علاقوں اور فاٹا سے نقل مکانی کرنے والے سولہ لاکھ افراد کے لیےماہانہ مفت خوراک فراہم کررہا ہے، لیکن پے در پے قدرتی آفات اور پاکستان میں امن و امان کی صورتحال کے پیش نظر عالمی اداروں کی جانب سے مزید تعاون بہت ضروری ہے۔اسکے ساتھ ساتھ یہ بھی اہم ہے کے قدرتی آفات اور دہشت گردی سے متاثرہ لوگوں کو روزگار فراہم کیا جائے، انکی غذائی ضروریات کا خیال رکھا جائے اور انکے بچوں کی تعلیم کا بندوبست کیا جائے جس کے لیے عالمی امدادی اداروں کے تعاون کی ضرورت ہے۔ عالمی ادارہ خوراک کی طرف سے آسڑیلیا، فرانس اور ناروے کے نمائندوں کو نوشہرہ میں واقع جلوزئی کیمپ اور سوات کا دورہ کرایا گیا جہاں انہیں جاری منصوبوں اور پروگراموں کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔ ورلڈ فوڈ پروگرام جلوزئی کیمپ اور پشاور کے مختلف علاقوں میں فاٹا سے عارضی طور پر بے گھر ہونے والے افراد میں مفت خوارک تقسیم کرنے کے ساتھ ساتھ سوات میں سیلاب اور دہشت گردی سے متاثرہ علاقوں میں ترجیحی بنیادوں پر سرگرم عمل ہے ۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment