جمعرات, 29 اکتوبر 2020


عمران خان کا تلور پر پابندی کا مطالبہ

 


ایمزٹی وی(اسلام آباد) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے تلور کے شکار پر پابندی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ صوبائی حکومت سے شکار کی اجازت نہ دینے کی سفارش کریں گے
تفصیلات کے مطابق عمران خان نے تلور کے شکار کے معاملے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ تلور ایک نایاب پرندہ ہے اور اس کا شکار غیر قانونی ہے، اس کی حفاظت کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملے پر وزیراعلیٰ کے پی کے پرویز خٹک سے بات کروں گا اور صوبائی حکومت سے سفارش کروں گا کہ تلور کے شکار کی کسی کو اجازت نہ دی جائے۔

واضح رہے کہ عرب ممالک کے باشندے تلور کا شکار کرنے کیلئے بڑی تعداد میں پاکستان کا رخ کرتے ہیں اور حکومت انہیں لائسنس بھی جاری کر دیتی ہے۔ حال ہی میں قطری شاہی خاندان کے 12 افراد بھی تلور کے شکار کیلئے پاکستان آئے اور بھکر کے قریب خیمہ بستی قائم کر کے تلور کا شکار کیا۔
اس موقع پر مقامی لوگوں نے فصلیں خراب ہونے کے باعث احتجاج بھی کیا اور خیمہ بستی کے قریب پہنچ کر حکومت مخالف نعرے بازی بھی کی۔ مقامی لوگوں کو قطری شاہی خاندان کے اتنا قریب دیکھ کر پولیس بھی بوکھلا گئی اور انہیں منتشر کرنے کیلئے لاٹھی چارج اور آنسو گیس کی شیلنگ کی گئی جس کے باعث مبینہ ’شکار گاہ‘ میدان جنگ میں تبدیل ہو گئی۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment