منگل, 20 اکتوبر 2020
×

Warning

JUser: :_load: Unable to load user with ID: 46


سپیکر قومی اسمبلی مستعفی ہوں

ایمزٹی وی (اسلام آباد) عمران خان نے کہا کہ اگر حکومت نے ان کی مرضی کا تحقیقاتی کمیشن نہ بنایا تو وہ پھر سڑکوں پر نکل پڑیں گے پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے سپیکر قومی اسمبلی سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ 18 جنوری کو ’دھرنا کنونشن‘ منعقد کرنے کا اعلان بھی کیا پیرکو اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب میں عمران خان نے ایک بار پھر الزام عائد کیا کہ 2013 کے انتخابات میں دھاندلی ہوئی تھی اور اس سلسلے میں تحقیقات کے لیے حکومت جس قسم کا عدالتی کمیشن بنانا چاہتی ہے، اس کا کوئی فائدہ نہیں ہے انھوں نے حلقہ این اے 122 میں مبینہ دھاندلی پر حکومتی موقف کو مسترد کرتے ہوئے سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنا عہدہ چھوڑ دیں کیونکہ کمیشن کی رپورٹ کے بعد وہ اس عہدے پر رہنے کا اخلاقی جواز نہیں رکھتے ان کا کہنا تھا کہ حلقہ این اے 122 کے بارے میں الیکشن ٹریبیونل کو بھجوائی گئی کمیشن رپورٹ موصول ہوگئی ہے جس نے پی ٹی آئی کی جانب سے بڑے پیمانے پر دھاندلی کے الزام کو درست ثابت کر دیا ہے۔
’رپورٹ کے مطابق 34376 ووٹ جعلی تھے، جب کہ 1395 بیلٹ پیپر پریزائیڈنگ افسران کے دستخط اور سٹیمپ کے بغیر تھے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment