منگل, 24 نومبر 2020
×

Warning

JUser: :_load: Unable to load user with ID: 45


جوہری مواد کو کسی صورت میں غلط ہاتھوں میں نہیں جاناچاہیئے، طارق فاطمی

 

ایمزٹی وی (اسلام آباد) واشنگٹن میں دو روزہ عالمی جوہری سلامتی کانفرنس میں امریکی صدراوباما کی طرف سے دیئے گئے عشائیے سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نوازشریف کے معاون خصوصی برائے خارجہ امور طارق فاطمی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے پاس جوہری مواد کی سلامتی کو یقینی بنانے کے لئے نیو کلیئر ایمرجنسی مینجمنٹ نظام سمیت ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے مؤثر میکنزم موجود ہے جبکہ بین الاقوامی سطح پر یہ تشویش پائی جاتی ہے کہ جوہری مواد کو کسی صورت غلط ہاتھوں میں نہیں جانا چاہیے اور پاکستان اس میں شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریڈیائی ذرائع نجی شعبے، ہسپتالوں، صنعتوں اور تحقیق کے شعبوں میں ہر جگہ استعمال کیے جارہے ہیں۔
جوہری سلامتی کانفرنس کے موقع پر وزیراعظم کے معاون خصوصی طارق فاطمی نے ترکی اور چین کے وزرائے خارجہ سے الگ الگ ملاقاتیں بھی کیں جس میں دونوں رہنمائوں نے دو طرفہ تعلقات سمیت اہم علاقائی اوربین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور ترکی دوستی اور تاریخ کے خصوصی رشتوں سے جڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نوازشریف 13 ویں او آئی سی سربراہ اجلاس میں شرکت کیلئے ترکی کا دورہ کریں گے۔
چینی وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان دہشتگردی کی لعنت کے خلاف عالمی جنگ میں سب سے آگے ہے اور پوری دنیا اس جدوجہد میں پاکستانی سیکورٹی فورسز اور عوام کی قربانیوں کا اعتراف کرتی ہے۔ چینی وزیر خارجہ نے دونوں ملکوں کے درمیان اسٹریٹجک پارٹنرشپ کو مستحکم بنانے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے سی پیک منصوبے کو جلد از جلد مکمل کرنے کے عزم کا اعادہ کیا۔ اس موقع پر طارق فاطمی نے چینی وزیر خارجہ کو سی پیک سے منصوبوں پر عملدرآمد کرنے سے متعلق پاکستان کے اقدامات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ دہشتگردی پاکستان اور چین کے لیے مشترکہ خطرہ ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment