اتوار, 29 جنوری 2023


راولپنڈی امام بارگاہ پر ہونے والے خودکش حملے کے الزام میں گرفتار 4 ملزمان کی سزائے موت کالعدم قرار ، فوری رہا کا حکم

ایمز ٹی وی ( لاہور ) چاروں افراد کو 2002 میں راولپنڈی میں امام بارگاہ پر ہونے والے خودکش حملے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔  لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بنچ کے جسٹس عباد الرحمان اور جسٹس قاضی محمد امین نے انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے جرم کے 4 افراد کی سزائے موت کے فیصلے کو غلط قرار دیتے ہوئے  سزائے موت کو کالعدم قرار دے دیا ہے۔ ہائی کورٹ کا اپنے فیصلے میں کہنا تھا کہ انسداد دہشت گردی کی عدالت کی جانب سے پھانسی کا سزائیں انصاف کے تقاضے پورے کئے بغیر ہی سنائی گئیں لہذا چاروں ملزمان حبیب اللہ، فضل حمید، طاہر حسین اور حافظ نصیر کو فوری طور پر باعزت رہا کیا جائے۔ 26 فروری 2002 کو تھانہ پیر ودھائی کی حدود میں امام بارگاہ شاہ نجف پر ہونے والے خود کش حملے کے الزام میں گرفتار 4 ملزمان کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے 9 دسمبر 2004 کو پھانسی کی سزا سنائی تھی، حملے میں 11 افراد جاں بحق اور 19 زخمی ہوئے تھے

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment