بدھ, 17 اگست 2022


دنیابھرمیں اسمارٹ فونزکی فروخت میں نمایاں کمی

دنیا بھرمیں مہنگائی،معاشی بحران اورغیریقینی صورتحال کے نتیجے میں اسمارٹ فونز کی فروخت میں نمایاں کمی آئی ہے۔

اسمارٹ فونز کی فروخت کی مانیٹرنگ کرنے والے ادارے Canalys کی جانب سے اپریل سے جون 2022 کے دوران ڈیوائسز کی فروخت کی رپورٹ جاری کی گئی۔

2022 کی دوسری سہ ماہی کے دوران گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں اسمارٹ فونزکی فروخت میں 9 فیصد کمی ریکارڈ ہوئی۔اپریل سے جون 2022 کے دوران دنیا بھر میں 28 کروڑ 74 لاکھ اسمارٹ فونز فروخت ہوئے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ دنیا بھر میں مہنگائی کی شرح بڑھنے، سیاسی صورتحال اور صارفین کے اعتماد میں کمی کی وجہ سے اسمارٹ فونز کی فروخت پر منفی اثرات مرتب ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق اسمارٹ فونز کی فروخت میں کمی کا یہ سلسلہ رواں سال کے آخر تک برقرار رہنے کا امکان ہے۔

2022 کی دوسری سہ ماہی کے دوران فونز کی فروخت کے حوالے سے سام سنگ کمپنی سرفہرست رہی جبکہ ایپل دوسرے، شیاؤمی تیسرے، اوپو چوتھے اور ویوو 5 ویں نمبر پر رہی۔

اس دوران مڈرینج اسمارٹ فونز کی طب میں سب سے زیادہ کمی دیکھنے میں آئی کیونکہ صارفین اب صارفین زیادہ سستے فونز کو ترجیح دے رہے ہیں۔

اس سے قبل 2020 میں کورونا وائرس کی وبا کے دوران اسمارٹ فونز کی طلب میں نمایاں کمی آئی تھی مگر 2021 میں حالات کسی حد تک بہتر ہوگئے تھے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment