پیر, 17 جنوری 2022


ایک مدہوش یونیورسٹیز،بورڈز کے مشیر ہیں ،پی ٹی آئی رکن

کراچی: سندھ میں بورڈکے پرچے لیک ہونے پر پی ٹی آئی کے رکن حلیم عادل شیخ نےشدیدغم وغصےکااظہارکیاہے۔

اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نےاپنے بیان میں کہاہے کہ ایک مدہوش یونیورسٹیز، بورڈز کے مشیر ہیں ایک زیر تعلیم وزیر تعلیم کے وزیرہیں دونوں نے تعلیم کا جنازہ نکال دیاہے، شرمناک عمل ہےکہ ہر روز پرچےآؤٹ ہورہےہیں بلاول کشمیرمیں ٹھنڈی ہوائی لے رہے ہیں بلاول زرا پیچھے تو دیکھو سندھ میں کیا ہورہا ہے۔بلاول کشمیر میں ایسے ہی گھوم رہے ہیں، ان کی وہی حالت ہوگی جو گلگت بلتستان میں ہوئی

انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ رجیکٹڈ، نااہل، نالائق لوگوں کی سندھ میں حکومت ہےفوری طور مدہوش مشیر اور زیر تعلیم وزیر کو فوری فارغ کیا جائے،سندھ کی عوام اس تعلیم، صحت دشمن سندھ حکومت کو معاف نہیں کرے گی۔

13 سالوں میں 1450 ارب تعلیم پر خرچ کیے گئے، پچھلے سال 244 ارب اس سال 277 ارب تعلیم کا بجٹ ہے،اربوں روپوں کے باوجود تعلیم کا یہ حال ہے۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment